125

سینئر وزیر عنایت اللہ خان کی قیادت میں وفد کی مشیر خارجہ سرتاج عزیز سے ملاقات ۔ فاٹا اصلاحات کے حوالے سے رائے عامہ ہموار کرنے میں بھرپور تعاون کریں گے ۔ عنایت اللہ خان فاٹا اصلاحات سے فاٹا میں ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی ۔ تیز ترین ترقی کیلئے ہر شعبہ میں جنگی بنیادوں پر منصوبہ بندی کریں گے۔ سرتاج عزیز

پشاور ( آوازنیوز ) سینئر وزیر بلدیات و دیہی ترقی خیبرپختونخو او پارلیمانی لیڈرجماعت اسلامی عنایت اللہ خان کے قیادت میں جماعت اسلامی فاٹا کے وفد نے مشیر خارجہ و چیئر مین فاٹا اصلاحاتی کمیٹی سرتاج عزیز سے ملاقات کی ۔وفد میں امیر جماعت اسلامی فاٹا سردار خان باجوڑی ، سابق ممبر قومی اسمبلی صاحبزادہ ہارون الرشید ، انتخاب خان چمکنی ، حاجی دلاور خان ، محمد حاجی ، عالم زیب خان ، بخت روان خان ، محمد عارف ، محمد حیات خان ، بسم اللہ خان ، صابرشاہ ، سازمنیر ، قاری عبدالواحد اور دیگر شامل تھے ۔سینئر وزیر عنایت اللہ خان نے سرتاج عزیز سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ جماعت اسلامی فاٹا اصلاحات کاخیر مقدم کرتی ہے۔70 سال بعد فاٹاکے عوام کو حقیقی شناخت مل رہی ہے ۔دنیانے سیاسی ، جمہوری، آئینی و قانونی ترقی کا سفر طے کیا ہے اور فاٹا ظالمانہ نظام کے تحت پتھر کے زمانے میں زندگی گزارنے پر مجبور تھے۔اصلاحات کی وجہ سے فاٹامحفوظ ہو جائے گا اور فاٹا کے عوام مایوسی سے نکل کر ترقی کی راہ پر گامزن ہو جائیں گے۔حکومت فاٹا اصلاحات کیساتھ ساتھ تیز ترین ترقی کیلئے ہر شعبہ میں ایمر جنسی بنیادوں پر منصوبہ بندی کرے۔تعلیمی ایمر جنسی نافذ کر یونیورسٹی اور میڈیکل کالجزکا جال بچھایا جائے۔غربت کے خاتمہ اور روزگار کی فراہمی کیلئے ہر ایجنسی میں انڈسٹری زون قائم کرے۔سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ کا دائرہ اختیار بڑھائے ۔ انہوں نے کہا کہ سرتاج عزیز کے محنت اور جدوجہد سے فاٹا اصلاحات ممکن ہوئے اور یہ ایک تاریخی فیصلہ ہے وفاقی حکومت کے فیصلے کو خوش آمدید کہتے ہیں۔ حکومت کے فیصلے کو پارلیمنٹ اور عوام میں بھرپور سپورٹ کریں گے ۔ وفد سے بات چیت کرتے ہوئے مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کہا کہ فاٹا اصلاحات اور صوبے میں انضمام سے فاٹا میں ترقی کی نئی راہیں کھلے گی اور فاٹا قومی دائرے میں شامل ہوجائے گی ۔انہوں نے کہا کہ فاٹا میں قانونی اور انتظامی نظام لائیں گے ،فاٹا میں ڈیم تعمیرکریں گے اور زمینوں کو آباد کر کے روزگار کے مواقعے پید ا کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ تعلیمی ادارے قائم کریں گے اور آئندہ بجٹ میں تعلیم کے لیے بڑی رقم مختص کریں گے ۔ سرتاج عزیز نے کہا کہ فاٹا میں انفراسٹرکیچر وفاقی حکومت کا اولین ترجیح ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات کے لیے فاٹا لوکل گورنمنٹ ایکٹ تیاری کے آخری مراحل میں ہے فاٹا میں بلدیاتی انتخابات کر اکر اختیار ات نچلی سطح پر منتقل کریں گے ۔ انہوں نے کہاکہ پولیس اور لیویز کا انتظام کریں گے اورفاٹا میں بیس ہزار لیویز بھرتی کرکے سیکورٹی کے امور پر مامور کیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ایف سی آر کا خاتمہ کرکے رواج ایکٹ لاگو کریں گے ۔ سرتاج عزیز نے مزید کہا کہ آئندہ ہفتے فاٹا اصلاحاتی کمیٹی صوبہ خیبرپختونخوا کا دورہ کرے گی اور فاٹا اصلاحات کے حوالے سے صوبائی حکومت سے مشاورت کرے گی ۔ سرتاج عزیز نے فاٹا اصلاحات کے حمایت اور بھرپور تعاون کے یقین دہانی پر شکریہ اداکر تے ہیں اور جماعت اسلامی کے نقطہ نظر کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ۔

Facebook Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں