71

امیرجے آئی خیبر پختونخوا مشتاق احمد خان کے آواز پر لبیک کہتے ہوئے جے۔ آئی یوتھ چترال کے کارکنوں نے کام کا آغاز کردیا ہے جوکہ چترال میں ایک ناقابل تسخیر یوتھ فورس بن چکی ہے

چترال (نمائندہ آواز ) جماعت اسلامی یوتھ فورس کا 16اپریل کو پشاور میں منعقد ہونے والی گرینڈ یوتھ کنونشن میں چترال سے بھر پور شرکت کے لئے تیاریاں زور پکڑ گئی ہیں اورامیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا مشتاق احمد خان کے آواز پر لبیک کہتے ہوئے جے۔ آئی یوتھ کے کارکنوں نے کام کا آغاز کردیا ہے جوکہ چترال میں ایک ناقابل تسخیر یوتھ فورس بن چکی ہے جس میں اب تک 14ہزار جوشیلے اور پاک باز نوجوانوں نے رجسٹریشن کرکے اس کے پرچم تلے آگئے ہیں۔ بدھ کے روز چترال پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے امیر ضلع چترال مولانا جمشید احمد کی موجودگی میں جے ۔آئی یوتھ کے ضلعی صدر وجیہ الدین اور دوسرے رہنما انجینئر فضل ربی، مولانا سلامت اللہ، عرفان عزیز ، جہا نزیب، تو صیف احمد ، امتیاز الرحمان ،غفور احمداور دوسروں نے جے ۔آئی یوتھ خیبر پختونخوا کی طرف سے پشاور میں گرینڈ یوتھ کنونشن کے انعقاد کو وقت کا اہم ضرورت قرار دیتے ہوئے اسے کامیاب بنانے کیلئے ہر قسم کی قربانی دینے کا اعلان کیا۔ انہوں نے کہاکہ ضلع چترال کے9 یو نین کونسلز میں انٹرا یوتھ الیکشن جماعت اسلامی چترال کی زیر نگرانی شفاف اور خوش اسلوبی سے انجام پا چکے ہیں جس کے لئے چودہ ہزار نوجوانوں نے رجسٹریشن کی تھی جبکہ ضلعے کے باقی 15یونین کونسلوں میں موسم کے سازگار ہونے پر انٹرا یوتھ الیکشن منعقد کرائے جائیں گے جس کے لئے مقامی نوجوان بے تابی سے انتظار کررہے ہیں۔گذشتہ سال جے آئی یوتھ چترال ضلع چترال میں مختلف پروگراما ت بھی اپنے نوجوانوں کے تعا ون سے انجام دینے میں کامیاب ہوا ہے۔ جس کی تمام تر کریڈٹ جے آئی یوتھ کے نوجوانون کو جا تا ہے۔ضلعی جے آ ئی یوتھ کی جانب سے چترال کے باقی یو سیز میں بھی رجسٹریشن فارم پہنچا دیے گئے ہیں جہاں سے نوجوان رجسٹرڈ ہو رہے ہیں اور انشاء اللہ 30 اپریل کو اپر چترال میں بھی الیکشن کا انعقاد ہوگا۔16اپریل کے گرانٹ یوتھ کنونشن میں ضلع چترال سے جے آئی یوتھ کے نوجوان بھر پور اور کثیر تعداد میں شرکت کریں گے۔ جے آ ئی یوتھ کے ذمہ داران متحرک ہو گئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہم اس پریس کانفرنس کے ذریعے چترال کے محب اسلام اور غیور نوجوانون سے اپیل کی ہے کہ وہ اس کنونشن میں بھر پور شرکت کرکے اس قافلے کا حصہ بنیں۔

Facebook Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں