71

ڈی پی او چترال پولیس لائن چترال میں کھلی کچہری

چترال (نمائندہ آوازچترال) ڈی پی او چترال کیپٹن (ر)فرقان بلال کی زیرصدارت پولیس لائن چترال میں کھلی کچہری منعقد ہوئی ۔جس میں ناظمین , کونسلرز ,تجار یونین چترال کے Image may contain: 7 people, including Sardar Khan, people smilingذمہ داران اور علاقائی عمائدین نے شرکت کی ۔ کھلی کچہری میں DRC پبلک لیزان کمیٹی کے ذریعے سے سول نوعیت کے کیسز حل کرنے ,منشیات فروشی کا قلع قمع کرنے ,نو عمر موٹر سائکل سواروں کے خلاف کاروائی کو موثر بنانے ,چترال بازار میں ٹریفک کے نظام کو بہتر بنانے , بازار میں چوری و ڈکیتی کی واراداتوں کی روک تھام , آتشبازی کے سامان پر پابندی اور بعض معذور افراد کی بطور ٹیکسی ڈرائیور گاڑی چلانے پر پابندی لگانے کا مطالبہ کیا گیا ۔ اس موقع پر کہا گیا ۔ کہ جابجا اڈے کھولے جا رہے ہیں ۔ جن کی وجہ سے نہ صرف مسافروں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔بلکہ ٹریفک کے نظام میں بھی خلل پڑ رہا ہے ۔ اس موقع چترال بائی پاس روڈ پر جگہ جگہ پارکنگ بنا کر گاڑی کھڑی کرنے والوں کے خلاف بھی کاروائی کا مطالبہ کیا گیا ۔ ڈی پی او چترال نے عوامی مسائل سننے کے بعد یقین دلایا ۔ کہ جن مسائل کی نشاندہی کی گئی ہے ۔ ان کے حل کیلئے اقدامات Image may contain: 5 people, people standingکئے جائیں گے ۔ انہوں نے چترال بازار میں چوری اور ڈکیتی کی وارات کرنے والوں کے خلاف فوری ایف آئی آر درج کرنے کی ہدایت کی ۔ اور کہا ۔ کہ Crime against property کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے میں تاخیر کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی ۔ انہوں نے شادی بیاہ کے موقع پر آتشبازی کو ناقابل قبول قراردیا ۔ ڈی پی او نے شہریوں کے مطالبے پر سبزی فروش گاڑیوں کو گاؤں جانے کی اجازت دی اور کہا ۔ کہ سستے داموں سبزیات کی خریداری عوام کا حق ہے ۔ اس لئے اس میں رکاوٹ ڈالنے وا لوں کے خلاف کاروائی کی جائے گئ ۔ کھلی کچہری میں نشاندہی کی گئی ۔ کہ چترال بازار میں 90,لاکھ روپے کی لاگت سے سولر سسٹم لگائے گئے۔ لیکن ناقص سولر سسٹم کی تنصیImage may contain: 3 people, people standingب کیوجہ سے کوئی فائدہ بازار کو نہیں ہوا۔ اور آج بھی بازار اندھیروں میں ڈوبا ہوا ہے ۔ ڈی پی او نے منشیات فروشوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کی یقین دھانی کی ۔کھلی کچہری میں ایڈیشنل ایس پی نور جمال , ایس ڈی پی او فاروق جان ,ایس ایچ او چترال تھانہ مفتاح الدین،وی سی ناظمین، , تجار یونین کے وفود و دیگر پولیس آفیسران وعمائدین موجود تھے ۔پروگرام کےاختتام پر چترال پریس کلب کے ممبران کو اچھی کارگردگی پر تعریفی سرٹیفیکٹ دیئےگئے

Image may contain: 3 people, people standing

Facebook Comments