46

آغا خان ہیلتھ سرو س پاکستان کے ملازمین کا ریجنل آفس کے سامنے دھرنا ؛۔ضلع بھر میں قائم چوبیس ہیلتھ سنٹروں میں ڈیوٹی دینا چھوڑ دیا ہے ۔ ادارے کی ممکنہ ڈاؤن سائزنگ اور اس کے نتیجے میں 75سے ذیادہ افراد کی ملازمت سے بے دخلی

چترال (نمائندہ آوازچترال) آغا خان ہیلتھ سرو س پاکستان کے ملازمین نے اتوار کے روز چترال شہر میں واقع ریجنل آفس کے سامنے دھرنا دیا جبکہ انہوں نے ہفتے کے دن سے ضلع بھر میں قائم چوبیس ہیلتھ سنٹروں میں ڈیوٹی دینا چھوڑ دیا ہے ۔ ہڑتالی ملازمین میں پیرامیڈیکل اسٹاف، لیبارٹری اسسٹنٹس ، ڈرائیور، چوکیدار اور وارڈ اردلی تک کے سٹاف شامل ہیں جوکہ ادارے کی ممکنہ ڈاؤن سائزنگ اور اس کے نتیجے میں 75سے ذیادہ افراد کی ملازمت سے بے دخلی کے پیدا شدہ خطرے کو ٹالنے کے لئے احتجا ج کررہے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ 15سے 25سال تک سروس رکھنے والے ملازمین کو بیک جنبش قلم گھر بھیجنے کی اجاز کسی کو نہیں دی جائے جوکہ ان کے ساتھ سراسر ناانصافی ہے۔ اتوار کے روز ادارے کے جنرل منیجر ڈاکٹر ظفر احمد نے دیگر سینئر اسٹاف کے ہمراہ ہڑتالی ملازمین سے گفت وشنید کرکے ان کی ہڑتال ختم کرانے کی کوشش کی جوکہ ناکامی سے دوچار ہوئی کیونکہ ان کی طرف سے ملازمتوں سے فارغ کرنے کو محض افواہ قرار دینے پر ان سے تحریری یقین دہانی کی فراہمی پر اصرار کیا گیا جوکہ وہ نہ دے سکے۔ ہڑتالی ملازمین نے احتجاج کو جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا ہے ۔ دریں اثناء ضلع بھر میں آغا خان ہیلتھ سنٹروں میں ہڑتال کی وجہ سے مریضوں کو سخت مشکل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے کیونکہ اکثر علاقوں میں سرکاری ہسپتال کی عدم موجودگی میں اے کے ایچ ایس کے ادارے ہی پرائمری ہیلتھ کئیر کے واحد ذرائع ہیں۔

Facebook Comments