48

پرنسپل کی برطرفی اور نئی پرنسپل کی تعیناتی کے خلاف ایس۔ وی۔ ٹی۔ آئی ۔کے طالبات کا ڈپٹی کمشنر آفس کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

Image may contain: one or more people, crowd and outdoorچترال ( نمائندہ آواز ) شاہین ووکیشنل ٹریننگ انسٹیٹوٹ  کالج بلچ چترال کے درجنوں طالبات نے کالج کے پرنسپل آسیہ اجمل کی برطرفی اور نئی پرنسپل کی تعیناتی کے خلاف کالج سے ڈپٹی کمشنر آفس چترال تک احتجاجی ریلی نکالی اورڈی سی آفس کے سامنے زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین پلے کارڈ اُٹھا رکھے تھے جن پر پرنسپل آسیہ اجمل کے حق میں اور نئی پرنسپل کی تعیناتی کے خلاف نعرے درج تھے۔ Image may contain: one or more people, people standing and outdoorاحتجاجی مظاہرین کی قیادت کالج کی طالبات نورالنساء، مہتاب، فاخرہ ، سائمہ ، صباو دیگر کررہی تھیں۔ احتجاجی مظاہرین کا موقف تھا کہ موجودہ پرنسپل اسیہ اجمل ایک محنتی اور پروفیشنل ہے جنھوں نے بہت ہی مختصر مدت میں ایک نوزائدہ ادارے کو ملک کے اعلیٰ ترین فنی اداروں میں شامل کردیا ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ صوبے میں بہترین کارکردگی کی بنیا د پر جرمن سفیر نے بھی ایس وی ٹی آئی بلچ کو مثالی قرار دیا ۔ Image may contain: one or more people, people sitting and indoorلہذا پرنسپل آسیہ اجمل کو ہر صورت برقرار رکھا جائے بصورت دیگر کالج کے تمام طالبات کلاسوں کا بائیکاٹ کرنے اور کالج کو تالہ لگانے پر مجبور ہونگے۔ تاہم مظاہرین ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر منہاس الدین کی یقین دہانی پر احتجاجی مظاہرہ موخر کرکے پر آمن طور پر منتشر ہوگئے ۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نے احتجاجی طالبات سے مذاکرات کیلئے موقع پر کالج کے پرنسپل اسیہ اجمل کو بھی بلوایا اور انھیں بھی یقین دہانی کی کہ ان کیلئے ضلعی انتظامیہ ہر ممکن کوشش اور تعاون کریگی ۔ اسیہ اجمل نے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کو بتایا کہ متعلقہ ادارہ نے نئی پرنسپل کی تعیناتی میں انھیں اندھیرے میں رکھا اور میرٹ کے برعکس تعیناتی کی ہے ۔ جبکہ ان کی کنٹریکٹ کی معیاد بھی ابھی پوری نہیں ہوئی ہے۔ لہذا وہ قانونی چارہ جوئی کا حق محفوظ رکھتی ہے۔Image may contain: 1 person, standing, crowd and outdoor
Facebook Comments