55

لیکشن ایکٹ2017 کے خلاف عمران خان کی درخواست پر اعتراض عائد

الیکشن ایکٹ2017 کے خلاف عمران خان کی درخواست پر اعتراض عائد

سپریم کورٹ نے انتخابی اصلاحات بل 2017کیخلاف پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان کی درخواست پر اعتراضات لگاتے ہوئے متعلقہ فورم سے رجوع کرنے کی ہدیت کی ہے۔ عمران خان نے گزشتہ دنوں انتخابی اصلاحات بل 2017 کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا جس میں موقف اپنایا گیا تھا کہ پاناما کیس کے فیصلے میں نوازشریف کو نااہل کیا گیا لیکن انہیں دوبارہ پارٹی صدر بنوانے کے لیے الیکشن ایکٹ میں ترامیم کی گئیں۔ سپریم کورٹ کے رجسٹرار آفس نے چیئرمین تحریک انصاف کی درخواست پر اعتراض لگا کر انہیں متعلقہ فورم سے رجوع کرنے کی ہدایت کی ہے۔رجسٹرار کی جانب سے کہا گیا ہے کہ متعلقہ فورم سے رجوع کیے بغیر براہ راست سپریم کورٹ سے رجوع نہیں کیا جاسکتا۔ واضح رہے کہ اس سے پہلے شیخ رشید اور پیپلزپارٹی نے بھی الیکشن ایکٹ 2017 کیخلاف درخواستیں دائر کی تھیں جن رجسٹرار آفس نے اعتراض لگایا تھا۔ پیپلزپارٹی اور شیخ رشید نے اعتراضات کیخلاف اپیلیں دائر کر رکھی ہیں۔عمران خان نے اپنی درخواست میں موقف اپنایا تھا کہ بطور رکن اسمبلی نااہل ہونے والا شخص پارٹی عہدہ نہیں سنبھال سکتا اور نوازشریف کو(ن)لیگ میں عہدہ دلوانے کے لیے الیکشن ایکٹ میں خصوصی ترامیم کی گئیں جو آئین سے متصادم ہیں۔

Facebook Comments