58

ڈاکٹروں کی جعلی رجسٹریشن پر 4ملازمین معطل

پشاور۔( آوازچترال رپورٹ)پشاور میں 30ڈاکٹروں کے جعلی رجسٹریشن کے الزامات میں پی ایم ڈی سی کے چار ملازمین کو معطل کر دیا ہے جبکہ پشاور کے 30ڈاکٹروں کی گرفتاری ، انہیں سرکاری ملازمت سے برطرف کرنے ان سے ریکوری کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے ۔ جبکہ چاروں ملازمین کو نیب نے اپنی حراست میں لے لیا ہے ۔
پی ایم ڈی سی کے ان چاروں ملازمین پر پشاور سمیت مجموعی طور پر 45سے زائد جعلی ڈاکٹرز کی رجسٹریشن کے الزامات تھے ۔ جن پر الزامات پر تحقیقات مکمل ہو گئی ہیں ۔نیب کی جانب سے چارج شیٹ میں لاکھوں روپے وصول کر کے خیبر پختونخوا سمیت ملک بھر کے 45سے زائد ڈاکٹرز کی رجسٹریشن کرنے کی تصدیق کی گئی ہے پی ایم ڈی سی کے چاروں ملازمین کو نیب کی جانب سے گرفتاری کے بعد ان جعلی ڈاکٹروں کی گرفتاری کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے ۔
جبکہ ایک ملازم نے تحقیقات کے خلاف نیب کورٹ میں اپیل بھی دائر کررکھی تھی پی ایم ڈی سی کے چاروں ملازمین کو آج نیب عدالت اسلام آباد میں پیش کیا جائے گا۔ ذرائع نے بتایا ہے کہ پی ایم ڈی سی حکام نے اس ضمن میں محکمہ صحت خیبرپختونخوا کو بھی آگاہ کیا ہے ۔

Facebook Comments