تازہ ترین

عوام کی خدمت کے لیے اپنی بہترین صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے ملک و قوم کا نام روشن کریں۔…آءی جی پی کے پ

پشاور(آوازچترال نیوز)انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبرپختونخوا معظم جاہ انصاری نے بنیادی تربیت مکمل کرنے والے ایف آئی اے کے اہلکاروں پر زور دیا ہے کہ وہ عوام کی خدمت کے لیے اپنی بہترین صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے ملک و قوم کا نام روشن کریں۔

یہ بات انہوں نے آج شاہ کس پولیس ٹریننگ سنٹر پشاور میں فیڈرل انوسٹی گیشن ایجنسی (FIA) کے چھ مہینوں پر مشتمل بیسک کورس کی پاسنگ آﺅٹ

پریڈ کے 431 شرکاءسے بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کہی۔ جن میں 387 مرد اور 34 لیڈیز اہلکار شامل تھے۔ یہ امر قابل ذکر رہے کہ ایف آئی اے کی تاریخ میں پہلی دفعہ اتنی بڑی تعداد میں اہلکاران ایک ساتھ پاس آﺅٹ ہوئے۔ ڈائریکٹر ایف آئی اے پشاور برانچ مجاہد اکبر، ڈی آئی جی ٹریننگ سید فیروز شاہ، کیپٹل سٹی پولیس آفیسر پشاور محمد اعجاز خان، ڈائریکٹر ٹریننگ شاہ کس شکیل خان اور لہ

دیگر اعلیٰ پولیس حکام کی کثیر تعداداس موقع پر موجود تھے۔ آئی جی پی نے پاس آﺅٹ ہونے والے اہلکاروں پر زور دیا کہ وہ تربیت کے دوران حاصل کردہ علوم اور تجربے کو عملی میدان میں بروئے کار لاکر قانون کے نفاذ کےساتھ عوام کی بھر پور خدمت کریں۔ پولیس سربراہ نے کہا کہ کامیابی سے تربیت مکمل کرنے والوں کا اصل امتحان اب شروع ہو رہا ہے۔ آپ مختلف شہروں میں امیگریشن، وائٹ کالر کرائم، سائبر کرائم ، منی لانڈرنگ اور کاﺅنٹر کرائم کے شعبوں پر خدمات سرانجام دیں گے۔ جو آپ سے تقاضا کرے گی کہ آپ الرٹ اور اپنی ذمہ داریوں سے باخبر ہوں۔ تاکہ معاشرے میں قانون نافذ کرنے کے لیے اپنی ذمہ داریوں کو بطریق احسن بجالاسکیں۔ آئی جی پی نے کہا کہ تربیت کے دوران حاصل کردہ علوم پر اس کی اصل روح کے مطابق عمل کرکے اپنے ادارے کی قدر و منزلت میں اضافہ کیا جاسکتا ہے۔ اور پاس آﺅٹ ہونے والے جوانوں پر زور دیا کہ وہ تشخیصی نقطہ نظر اپنا کر باقاعدہ منصوبہ بندی اور حکمت عملی کے ساتھ ان کے دائرہ کار میں آنے والے جرائم کے سدباب کو یقینی بنائیں۔ آئی جی پی نے کہا کہ خیبر پختونخوا پولیس عملی اقدامات پریقین رکھتی ہے۔ خیبر پختونخوا پولیس کے تمام اہلکار خود بھی ٹریننگ کررہے ہیں اور دوسرے اداروں کے اہلکاروں کی ٹریننگ ضروریات پوری کرنے میں بھی پیش پیش ہے۔ اور اس کی واضح مثال آج کی پاسنگ آﺅٹ پریڈہے جس میں چار صوبوں کی نمائندگی ہورہی ہے۔ اور کہا کہ خیبر پختونخوا پولیس اپنے ساتھی مقتدر اداروں کے اہلکاروں کو تربیت فراہم کرنے کو اپنے لیے اعزاز سمجھتی ہے۔ واضح رہے کہ ایف آئی اے کے اہلکاروں کے لیے ان کی ڈیوٹی کی نوعیت کے مطابق ٹریننگ ماڈیول تربیت دیا گیا تھا۔
یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ خیبر پختونخوا پولیس نے مشکل حالات کے باوجود ٹریننگ کے سلسلے کو منقطع نہیں ہونے دیا اور تربیت کے عمل کو ہر حال میں جاری رکھا۔ یہی وجہ ہے کہ خیبر پختونخوا کے تربیتی ادارے بہترین پیشہ ورانہ تربیت فراہم کرنے کے مرکز بنے ہوئے ہیں۔ اور ملک کے کونے کونے سے مختلف اداروں کے اہلکار یہاں کے تربیت کے حصول کے لیے آرہے ہیں۔
قبل ازیں آئی جی پی نے پریڈ کا معائنہ کیا اور بیسک کورس میں نمایاں پوزیشن حاصل کرنے والے ایف آئی اے کے اہلکاروں کو اعزازی شیلڈ سے نوازا۔
بیسٹ ان لاءمیں محمد عمر طیب (پنجاب) نے پہلی پوزیشن، محمد مزمل (اسلام آباد) نے دوسری پوزیشن اور احتشام الحق (چارسدہ) نے تیسری پوزیشن حاصل کی۔ بیسٹ ان پریڈ میں خیبر پختونخوا کے محمد سلیم نے پہلی اور پنچاب کے محمد زبیر نے دوسری پوزیشن حاصل کی۔ جبکہ فائرنگ میں مردان کے امجد علی آل راﺅنڈ بہترین فائرر قرار پائے۔ لیڈیز کٹیگریز میں بیسٹ ان لاءمیں جھنگ پنجاب کی تخمینہ سجاد پہلی، اوکاڑہ کی صبا عالم دوسری اور اوکاڑہ ہی کے ام عمارہ تیسری نمبر پر قرار پائی۔ لیڈیز میں بیسٹ ان پریڈمالاکنڈ کی گلالئی نے پہلی اوکاڑہ کی ام عمارہ نے دوسری اور لکی مروت کی شازیہ فاروق نے تیسری پوزیشن حاصل کی۔
قبل ازیں ڈائریکٹر شاہ کس پولیس ٹریننگ سنٹر شکیل خان نے خطبہ استقبالیہ پیش کرتے ہوئے کورس کے اغراض و مقاصد اور اہلکاروں کو فراہم کی جانے والی تربیت سے آگاہ کیا اور پریڈ کے. شرکاءسے اپنے فرائض منصبی کا حلف اُٹھایا۔ آئی جی پی نے ڈائریکٹر ایف آئی اے پشاور کو خصوصی سوونیئر بھی پیش کیا جبکہ ڈی آئی جی ٹریننگ نے آئی جی پی کو تربیتی ادارے کی جانب سے خصوصی سوونیئر پیش کیاگیا۔
بعد ازاں آئی جی پی نے تختی کی نقاب کشائی کرکے پولیس ٹریننگ سنٹر شاہ کس میں متعدد منصوبوں کا افتتاح بھی کیا۔

Facebook Comments

متعلقہ مواد

Back to top button