تازہ ترین

ملک کے دیگر حصوں کی طرح چترال بالا اور زرین میں کشمیری مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی ا

 چترال(نماندہ آوازچترال)ملک کے دیگر حصوں کی طرح چترال بالا اور زرین میں میں بھی 5 اگست کشمیری مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کیلئے یوم استحصال کے طور منایا گیا۔اس ضمن میں چترال ٹاوں اور دیگرعلاقوں  میں احتجاجی واک کا اہتمام کیا گیا جن میں شرکاء نے ہندوستانی ناجائز قبضے کی سخت الفاظ میں مذمت کی اور کشمیر ی بھائیوں سے یکجہتی کا اظہار کیا۔صوبائی حکومت کی احکامات کی روشنی میں اسسٹنٹ کمشنر چترال لوئر وقاص مسعود چودھری نے تاجر برادری ، طلباءاور عام شہریوں اور ریسکیو ۱۱۲۲ کے ساتھ  آج یومِ استحصال کشمیر ریلی نکالی اور طلباء کو کشمیر میں جاری مظالم پر آگاہی دی۔ اس روز عوام سے یہ عہد لیا گیا کہ کشمیری بھائیوں کے ساتھ ظلم و زیادتیوں کے خلاف آواز بلند کرتے رہیں گے جب تک کہ کشمیر پاکستان کا حصہ نہیں بن جاتا۔اسی  طرح اپر چترال میں بھی ضلعی انتظامیہ کے زیر اہتمام یوم استحصال کشمیر منایا گیا۔ اس حوالے سے ایک ریلی گورنمنٹ ہائی سکول بونی سے نکالی گئی۔ ریلی میں اسسٹنٹ کمشنر مستوج شاہ عدنان، سردار حکیم چیرمین تحصیل کونسل مستوج، مفتاح الدین ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر اپر چترال، آمین الرحمن تحصیل میونسپل آفیسر مستوج، ضلعی انتظامیہ اور محکمہ تعلیم اپر چترال کے افسران، پرنسپل صاحبان، اساتذہ کرام، طلباء اور عام عوام نے شرکت کی۔ ریلی کے شرکاء نے کشمیر کے نہتے مسلمانوں کے ساتھ ہندو سامراج کے مظالم کی بھرپور مذمت کی اور انڈین حکومت کے خلاف نعرے لگائے۔ مقررین نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کشمیری مسلمانوں کے امنگوں اور اقوام متحدہ کے قراردادوں کے مطابق حل کرنا چاہیے۔

Facebook Comments

متعلقہ مواد

Back to top button