تازہ ترینکھیل

اِس سال پولو فیسٹیول 1 سے 3 جولائی کے درمیان شندور کی خوبصورت وادی میں منعقد کیا گیا….چترال،ڈپٹی کمشنر لوئر چترال

چترال(آوازچترال نیوز.)  دو سال کے طویل عرصے کے بعد حسب روایت ضلعی انتظامیہ ، خیبر پختون خواہ کلچر اینڈ ٹورازم اتھارٹی اور فرنٹیئر کور نارتھ کے مشترکہ تعاون سے اِس سال پولو فیسٹیول 1 سے 3 جولائی کے درمیان شندور کی خوبصورت وادی میں منعقد کیا گیا. شندور پاس جو May be an image of ‎4 people, outdoors and ‎text that says '‎ان 1 DC upper chitral official page‎'‎‎کہ سطح سمندر سے تقریباً 3738 میٹر بلندی پر واقع ہے نا صرف فلک بوس اور برف پوش پہاڑوں سے گرھے ہونے کی وجہ سے بلکہ ہر سال منعقد ہونے والی پولو ٹورنامنٹ کے لئے دنیا بھر میں مشہور ہے جو کہ جولائی کے مہینے میں چترال اور گلگت کی ٹیموں کے درمیان کھیلا جاتا ہے. کمشنر ملاکنڈ ڈویژن، سیکٹری سپورٹس کلچر اینڈ ٹورازم اتھارٹی، ڈائریکٹر جنرل کلچر اینڈ ٹورازم اتھارٹی، ڈی آئی جی ملاکنڈ، کمانڈنٹ چترال May be an image of one or more people, people standing, grass and text that says 'f DC upper chitral official page'سکاؤٹس، ڈپٹی کمشنر اپر چترال،ڈپٹی کمشنر لوئر چترال، ڈی پی او اپر چترال نے بطور مہمان خصوصی اِس تقریب کی اہمیت کو اپنی موجودگی سے مزید رونق بخشی. اِس دل افروز تقریب کا افتتاح پیرا ٹروپرز اور پیرا گلائڈرز نے کیا اور ہجوم سے خصوصی خراج تحسین حاصل کی. افتتاحی تقریب میں اسکواڈز نے مارچ کیا جبکہ مختلف سکولوں کے طلباء نے قومی ترانہ پڑھا۔ شندور ٹاپ پر کھیلے جانے والے پولو کے فری سٹائل ورژن نے May be an image of outdoors and text that says 'f DC upper chitral official page'افسانوی حیثیت حاصل کر رکھی ہے اور یہ بین الاقوامی اور ملکی ایڈوینچرس سیاحوں کے لیے یکساں دلچسپی کا باعث ہے پہلے روز مختلف ٹیموں کے درمیان تین میچ کھیلے گئے۔ افتتاحی میچ میں چترال کی لاسپور ٹیم اور گلگت بلتستان کی غذر ٹیم ایک دوسرے کے مدمقابل ہوئی جس میں چترال May be an image of 1 person, standing, outdoors and text that says 'f DC upper chitral official page'کی لاسپور کی ٹیم نے مخالفین کے 4 کے مقابلے 16 گول کر کے میچ اپنے نام کیا. چترال پولو ٹیم اور گلگت بلتستان کی ٹیم کے درمیان سنسنی خیز فائنل میچ کے دوران چترال پولو ٹیم نے ایک گول سے ٹورنامنٹ جیت کر ٹرافی اپنے نام کی پولو میچوں کے علاوہ میگا ایونٹ میں روایتی، ثقافتی اور مہم جوئی کی سرگرمیاں بھی شامل تھیں. بلتستان کے بچوں نے اپنے قومی گیتوں پر پرفارم کیا جبکہ وادی کالاش کے نوجوانوں نے روایتی رقص کا مظاہرہ کیا. انتظامیہ کی تمام کاوشوں کو مقامی اور بین الاقوامی سیاحوں کی طرف سے پرجوش پذیرائی ملی. یہ پولو فیسٹیول 3 جولائی کو اختتام پذیر ہوا.

Facebook Comments

متعلقہ مواد

Back to top button