تازہ ترینکاروبار

آئی ایم ایف نے پاکستان کو پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے کے بغیر قرض دینے سے انکار کردیا

اسلام آباد( آوازچترال نیوز ) نون لیگ اور اتحادی حکومت کے سامنے ایک بڑی مشکل کھڑی ہوگئی ہے عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) نے پاکستان کو پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں اضافے کے بغیر قرض دینے سے انکار کردیا ہے. ورلڈ بنک‘ایشین ڈویلپمنٹ بنک سمیت دیگر مالیاتی ادارے اوردوست ممالک آئی ایم ایف کے فیصلے کا انتظار کررہے تھے جس کے بعد انہوں نے پاکستان کی درخواستوں پر غور کرنا تھا مگر آئی ایم ایف کے انکار کے بعد حکومت کو کسی دوسرے عالمی مالیاتی ادارے سے مدد ملنے کی امید ختم ہوگئی ہے.   نجی ٹی وی ”جیونیوز“نے اپنے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ آئی ایم ایف کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں کو بڑھائے بغیر قرض کی قسط دینے سے انکار سامنے آیا ہے ذرائع کے مطابق پاکستان کو پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتیں بڑھائے قرض کی بغیر قسط جاری نہیں ہوگی. اس سے قبل آئی ایم ایف نے پاکستان کے تمام مطالبات سے اتفاق کرلیا تھا، تاہم مالیاتی ادارے نے اب قسط اجرا پروگرام دورانیہ بڑھانا بھی پٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمت بڑھانے سے مشروط کردیا ہے ذرائع کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف نے مذاکرات جاری رکھنے پر اتفاق کیا ہے، پاکستانی وفد نے وزیراعظم شہباز شریف سے بات چیت کے بعد جواب دینے کا کہا ہے. آئی ایم ایف نے پاکستان سے مذاکرات کا اعلامیہ جاری کردیا ہے، جس میں پٹرول اور بجلی پر سبسڈیز ہٹانے کا مطالبہ کیا گیا ہے اعلامیے میں کہا گیا کہ آئندہ بجٹ میں قرض پروگرام کے مقاصد کے حصول پر بھی زور دیا گیا ہے، پاکستان سے مذاکرات جاری رکھنے پر اتفاق ہوا ہے اعلامیے کے مطابق تمام پاکستانیوں کے فائدے کے لیے میکرو اکنامک استحکام یقینی بنانے کا عزم ہے، پاکستانی حکام کے ساتھ انتہائی تعمیری مذاکرات ہوئے. آئی ایم ایف اعلامیے میں یہ بھی کہا گیا کہ پاکستان نے گزشتہ جائزے میں طے شدہ پالسیوں سے انحراف کیا ہے وزارت خزانہ کے مطابق آئی ایم ایف سے مذاکرات اگلے ہفتے سے شروع ہونے جارہے ہیں، وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کل دوحہ سے پاکستان واپس پہنچ رہے ہیں.

Facebook Comments

متعلقہ مواد

یہ بھی چیک کریں
Close
Back to top button