تازہ ترین

الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی کے 20 اراکین کو نااہل قرار دینے کے ریفرنسز کا تہلکہ خیز فیصلہ سنا دیا

اسلام آباد (  آوازچترال نیوز)الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف کے20 اراکین کو نااہل قرار دینے کا ریفرنس مستر دکر دیاہے۔الیکشن کمیشن  کی جانب سے دلائل مکمل ہونے پر آج صبح فیصلہ محٖفوظ کیا گیا تھا جوکہ اب سنا دیا گیاہے۔ تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ اراکین اسمبلی پر آرٹیکل 63 اے کا اطلاق نہیں ہوتا۔ یاد رہے کہ ڈپٹی سپیکر نے 20 اراکین اسمبلی کے خلاف ریفرنس الیکشن کمیشن کو بھیجا تھا۔ پی ٹی آئی کے منحرف ارکان قومی اسمبلی  کے خلاف نا اہلی ریفرنسز  پر سماعت الیکشن کمیشن میں ہوئی ،  منحرف رکن نور عالم کے وکیل نے دلائل دیے کہ  نور عالم خان اب بھی پارٹی کا حصہ ہیں ،  انہوں نے پارٹی کے کچھ فیصلوں سے اختلاف کیا جو جمہوریت کا حصہ ہیں ۔    نور عالم خان  کے وکیل نے دلائل دیے کہ   نور عالم خان ںے کبھی ایسا تاثر نہیں دیا کہ وہ  پارٹی چھوڑ رہے ہیں ،  19 مارچ کو انہیں  شوکازنوٹس موصول ہوا جس کا 22 مارچ کوجواب دیا گیا ،  نورعالم نےپارٹی کےکچھ فیصلوں سےاختلاف کیاجوجمہوریت کاحصہ ہے،    پارٹی چیئرمین نےقومی اسمبلی اجلاس میں شرکت کی ہدایت کی جس پر  3 اپریل کونورعالم خان نےقومی اسمبلی اجلاس میں شرکت کی۔ ممبر الیکشن کمیشن ناصر درانی نے استفسار کیا کہ  پی ٹی آئی کاآئین اس حوالےسےکیاکہتاہے؟ آرٹیکل 63 ون اےکیاکہتاہے؟۔ وکیل نے الیکشن کمیشن کو بتایا کہ  نورعالم خان نےکسی اورپارٹی میں شمولیت اختیارنہیں کی، تاثردیاگیانورعالم خان نےپارٹی پالیسی کی خلاف ورزی کی ہے ۔   ممبر ناصر درانی نے  پوچھا کہ  کیانورعالم نےتحریک عدم اعتمادکےدن ووٹ کاسٹ کیا؟،  نورعالم خان نےتحریک عدم اعتمادپرووٹ کاسٹ نہیں کیا، ووٹنگ سےپہلےنورعالم خان کومنحرف قراردےدیاگیا، نورعالم خان پرآرٹیکل 63 ون اےکااطلاق نہیں ہوتا۔

Facebook Comments

متعلقہ مواد

Back to top button