تازہ ترین

سابق اسپیکر اسد قیصر کی جانب سے خلافِ ضابطہ بھرتیوں اور ترقیوں کا انکشاف

اسلام آباد (آوازچترال ) سابق اسپیکرقومی اسمبلی اسد قیصر کے خلافِ ضابطہ بھرتیاں اور ترقیاں دینے کا انکشاف ہوا ہے، 200 سے زائد افراد کو پارلیمنٹ سیکریٹریٹ میں بھرتی کیا گیا، نئی بھرتیوں والے ملازمین کا تعلق اسد قیصر کے انتخابی حلقے سے ہے۔ جیونیوز کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق اسپیکرقومی اسمبلی اسد قیصر کی جانب سے اپنے انتخابی حلقے سے 200 سے زائد افراد کو پارلیمنٹ سیکرٹریٹ میں خلافِ ضابطہ بھرتی کیا، جبکہ ملازمین کو ترقیاں بھی دی گئیں، بتایا گیا ہے، نئی بھرتیوں والے ملازمین کا تعلق اسد قیصر کے انتخابی حلقے سے ہے۔ سابق اسپیکر نے اپنے بہنوئی طاہر قدیم کو گریڈ17 میں خیبرپختونخوا اسمبلی میں عارضی بھرتی کرایا اور بعد میں انہیں  خلاف قواعد ڈیپوٹیشن پر اسلام آباد تعینات کرا دیا، جبکہ بعد میں ان کی ملازمت کو مستقل طور پر قومی اسمبلی میں ضم کردیا گیا۔ اسی طرح خلاف ضابطہ 9 افسران کو2 اپریل کو پروموشن بھی دی گئی جبکہ تحریک عدم اعتماد سے ایک روز قبل اپنے بہنوئی طاہر کو گریڈ 19 میں ترقی دے دی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق اسپیکرقومی اسمبلی اسد قیصر کی جانب سے یہ بھرتیاں خلاف ضابطہ کی گئیں، کیونکہ یہ بھرتیاں اور تقرریاں قومی اسمبلی کی فنانس کمیٹی میں ایجنڈے پر نہیں تھیں، اسی طرح ان تقرریوں کیلئے کوئی پیپر ورک بھی تیار نہیں کیا گیا تھا۔ دوسری جانب جیو نیوز کے مطابق حکومت نے بنی گالہ سے وزیراعظم ہاؤس تک ہیلی کاپٹر سفر کے اخراجات کے اعدادوشمار جاری کردیے، حکومتی دستاویزات میں بتایا گیا کہ سابق وزیراعظم عمران خان کے ہیلی کاپٹر سفر پر 98 کروڑ روپے خرچ ہوئے، ہیلی کاپٹر کی ایک گھنٹے کی پرواز 2 لاکھ 75 ہزار روپے میں پڑتی ہے، بنی گالہ سے وزیراعظم آفس کا سفر پندرہ کلومیٹر ہے، عمران خان کے ہیلی کاپٹر پر یومیہ 8لاکھ روپے سے زائد کا خرچ آیا ہے۔

Facebook Comments

متعلقہ مواد

Back to top button