تازہ ترین

جمعیتالعلماء چترال تحصیل کے امیدوار مولانا عبدالرحمن ہزارون وٹوں کی اکثریت سے جیت جاءےگی جنرل سکیرٹری میمان

چترال ( محکم الدین ) جمیعت العلماء اسلام ف کے تحصیل کونسل چترال کے امیدوار مولانا عبد الرحمن کے الیکشن کی سرگرمیوں کا جائزہ لینے کیلئے پریس کلب چترال کے صحافیوں نےگذشتہ روز ان کے الیکشن آفس کا دورہ کیا ۔ جس میں جے یوآئی کے قائدین کی زیر نگرانی انتخابی انتظامات اور سرگرمیاں عروج پر دیکھنے کو ملیں ۔ ملک کے کونے کونے میں مدارس میں پڑھنے والے طلباء ماہ رمضان کی چھٹیوں میں گھر پہنچتے ہی انتخابی دفتر میں حاضری دیتے اور جھنڈے ، بینر اور اشتہارات لے جاتے ہوئے دیکھے گئے ۔ اورالیکشن آفس میں سرگرمیاں زور و شور سے جاری ہیں ۔ اس موقع پر میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے جنرل سیکرٹری جے یو آئی حافظ انعام حنیف میمن نے کہا ۔ کہ ہم اپنے ا میدوار مولانا عبد الرحمن کی کامیابی کیلئے تمام تر تیاری کر چکے ہیں ۔ چترال شہر میں تین آفس دن رات کام کر رہےہیں ۔اور ہمیں اللہ پاک کی ذات پر یقین ہے ۔ کہ اکتیس مارچ کے دن کامیابی انتخابی نشان کتاب کی ہی ہو گی ۔ اس کی وجہ یہ ہے۔ کہ جے یو آئی والے مذہبی اور شرافت والے لوگ ہیں۔ مولانا عبد الرحمن اس سے پہلے بھی پانچ سال صوبائی اسمبلی کے رکن رہ چکے ہیں ۔ ان کی لوگوں کے ساتھ مراسم اور ان کی خدمات ہیں ۔ ہمیں کوہ سے سب سے زیادہ ووٹ آنے کی امید ہے ۔ کیونکہ یہ ان کا آبائی حلقہ ہے۔ اس کے علاوہ چترال شہر ، ایون ، رمبور ، بمبوریت ، بریر سمیت لٹکوہ سے ووٹ کی امید ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ پاکستان مسلم لیگ ن ہماری اتحادی جماعت ہے ۔ جبکہ پاکستان راہ حق پارٹی نے انتخابی تعاون کا اعلان کیا ہے اور ہمارے امیدوار کی کامیابی کیلئے سرگرم عمل ہیں ۔ پاکستان مسلم لیگ کے رہنما شہزادہ افتخار الدین اور عبدالولی خا ن ایڈوکیٹ بھی کام کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ مدارس ہمارے سب سے بڑے قلعے ہیں ۔ ہمارے طلبہ و طالبات جو دینی علم حاصل کر رہے ہیں ۔ وہ خود بھی ہمیں ووٹ دیں گے اور ان کے والدین بھی اپنا ووٹ ہمارے حق میں استعمال کریں گے ۔ مولانا فیض محمد مرکزی رکن مجلس عمومی نے کہا ۔ کہ یہ بات مسلمہ ہے ۔ کہ جس کا بھی مقابلہ ہو ہوگا ۔ مولانا عبد الرحمن سے ہی ہو گا ۔ اور تحصیل چترال کا کوئی علاقہ یا گاوں ایسا نہیں ہے ۔ جہاں جے یو آئی کے ووٹ نہ ہوں ۔ اور ہماری سب سے بڑی خوش قسمتی یہ ہے ۔ کہ ان دنوں ماہ رمضان کیلئے مدارس کی چھٹیاں ہو چکی ہیں ۔ جن کے طلباء ہمارے انتخابی کارکن ہیں ۔ اور ان کی تعداد ہزاروں میں ہے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ ہر مسجد کا امام ، خطیب اور طالب علم جمیعت کے امیدوار کی کامیابی کیلئے سرگرم عمل ہے ۔ اور انشااللہ کامیابی مولانا عبد الرحمن کی ہوگی ۔

Facebook Comments

متعلقہ مواد

یہ بھی چیک کریں
Close
Back to top button