تازہ ترین

نیب فراڈ ہے، براڈ شیٹ کے سربراہ نے نواز شریف سے معافی مانگ لی

لندن( آوازچترال ) اثاثہ برآمدگی فرم براڈ شیٹ نے بدعنوانی کے الزامات لگانے پر مسلم لیگ (ن)کے قائد نواز شریف سے معافی مانگ لی۔ کمپنی کو جنرل (ر)پرویز مشرف نے شریف خاندان سمیت سیاسی مخالفین کے خلاف تحقیقات کا ٹھیکا دیا تھا، جس کے سی ای او نے  ایک ویڈیو انٹرویو میں معافی مانگی۔  براڈ شیٹ  کے سربراہ کاوے موسوی نے کہا کہ ہمیں دوسروں کی بہت سی لوٹی ہوئی دولت ملی لیکن میں بطور خاص کہہ سکتا ہوں کہ تقریباً 21سال کی تحقیقات میں نواز شریف یا ان کے خاندان کے کسی رکن کا ایک روپیہ نہیں تھا۔ کاوے موسوی کا کہنا تھا کہ قومی احتساب بیورو کا روپ دھارے فراڈ میں فریق بننے پر مجھے سابق وزیراعظم سے معافی مانگنے میں کوئی ہچکچاہٹ نہیں، نیب پورا کا پورا فراڈ ہے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو مکروہ الزامات کا نشانہ بنایا گیا، جب حقائق تبدیل ہوئے تو میں نے اپنے خیالات تبدیل کرلیے۔ حالیہ ایک انٹرویو میں کاوے موسوی نے کہا کہ 22 برس قبل جب مشرف نے ہمیں نواز شریف کی تحقیقات کا کہا تو ہم نے یقین کرلیا اور تحقیقات شروع کردیں اور ہر موڑ پر ہم نے دیکھا کہ تحقیقات کو سبوتاژ کیا گیا جس کی وجہ یہ نہیں کہ ہم قریب پہنچ گئے تھے بلکہ ارادہ صرف الزام تراشی کا نشانہ بنانے کا تھا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ قومی احتساب بیورو نے بھی ہمیں دھوکہ دہی سے متعلق غلط بیانی کا نشانہ بنایا۔ خیال رہے کہ گزشتہ برس متعدد مواقع پر کاوے موسوی نے دعوی کیا تھا کہ ان کے پاس نواز شریف کے خلاف کرپشن کے شواہد ہیں اور یہ بھی دعوی کیا تھا کہ شریف فیملی نے انہیں رشوت دینے کے لیے رابطہ کیا تھا۔

Facebook Comments

متعلقہ مواد

Back to top button