تازہ ترینکاروبار

عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں مزید بڑی گراوٹ، فی بیرل قیمت 100 ڈالرز سے نیچے آگئی

نیویارک ( آوازچترال) عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں مزید بڑی گراوٹ، فی بیرل قیمت 100 ڈالرز سے نیچے آگئی، امریکی خام تیل کی قیمت 95 ڈالرز جبکہ پاکستان سمیت دنیا کے بیشتر ممالک کی جانب سے استعمال کیے جانے والا برطانوی خام تیل 98 ڈالرز کی سطح پر آگیا۔ تفصیلات کے مطابق روس اور یوکرین کے درمیان مذاکرات کے آغاز سے جاری تنازع میں کمی کی توقع اور چین میں کورونا وائرس سے متعلق پابندیوں کے بعد طلب میں کمی کے خدشات کے نتیجے میں عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں 8 فیصد سے زائد کمی آئی ہے۔ غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق چند روز قبل ہی 130 ڈالرز کی سطح کو بھی عبور کر جانے والا خام تیل اب دوبارہ 100 ڈالرز کی سطح سے نیچے چلا گیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ 8 فیصد سے زائد کمی سے برینٹ خام تیل کی فی بیرل قیمت اب 98 ڈالرز پر ٹریڈ ہو رہی ہے۔   جبکہ امریکی خام تیل 7 فیصد سے زائد کمی سے 95 ڈالرز کی قیمت پر ٹریڈ ہو رہا ہے۔ یوں خام تیل کے دونوں بینچ مارک 28 فروری کے بعد کم تر سطح پر آگئے۔ دونوں بینچ مارک 24 فروری کو یوکرین پر روس کے حملے کے بعد بڑھ گئے تھے جس کے بعد عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتیں 14 سال کی بلند ترین سطح پر چلی گئی تھیں۔ تجزیہ کاروں کی رائے میں یوکرین اور روس کے درمیان مذاکرات کے نئے دور کے علاوہ ممکنہ طور پر چین میں نیا لاک ڈائون وہ بنیادی وجہ ہے جس سے خام تیل کے لیے منفی ہفتے کا آغاز ہوا۔ جبکہ دوسری جانب پابندیوں کے باوجود روس رواں ماہ تاحال روزانہ 11.12 ملین بیرل تیل اور گیس پیدا کررہا ہے۔ خیال رہے کہ امریکا اور برطانیہ نے گزشتہ ماہ روس کے تیل کی درآمد پر پابندی عائد کرنے کا اعلان کیا تھا جو 2022 کے اختتام تک برقرار رہیں گی۔

Facebook Comments

متعلقہ مواد

Back to top button