تازہ ترین

وزیر اعظم کو استعفیٰ دینے کے لیے 5 دن کی مہلت

بہاولپور( آواز چترال) پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ عمران خان کے پاس 5دن کی ڈیڈ لائن ہے خود مستعفی ہوجائیں، اگرغیرت ہے تو وزیراعظم اسمبلی توڑکرہمارا مقابلہ کریں۔  نجی ٹی وی کے مطابق پیپلز پارٹی  لانگ مارچ بہاولپور پہنچا تو بلاول بھٹو نے  چنی گوٹھ میں جیالوں سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ عوام عمران خان سے چھٹکارہ چاہتے ہیں، عمران خان کے پاس 5دن کی ڈیڈ لائن ہے، اگرغیرت ہے تواسمبلی توڑ کر ہمارا مقابلہ کرو، پانچ دن بعد ہمارے پاس عدم اعتماد کے نمبرز پورے ہو چکے ہوں گے۔ہم اسلام آباد پہنچ کرتمہارا بندوبست کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ شہید بھٹوکے نامکمل مشن کومکمل کرنا ہے۔ ہم عوامی حکومت بنا کرعوام کے مسائل کوحل کریں گے۔ اتحادیوں کوکٹھ پتلی کا ساتھ نہیں دینا چاہیے، ہم اس کوہٹا کرشفاف الیکشن کروائیں گے۔  بہاولپورنے ثابت کردیا وزیراعظم سے اعتماد اٹھ گیا ہے، تمام جماعتوں کو عدم اعتماد میں ساتھ دینا چاہیے۔ اب ہم نے کٹھ پتلی سے حساب لینا ہے، اسلام آباد جاکرکٹھ پتلی سے ٹکرائیں گے۔ بلاول نے عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگرآپ ہمارے ساتھ ہو تو دنیا کی کوئی طاقت راستہ نہیں روک سکتی، جیالوں نے ضیاالحق، مشرف کا مقابلہ کیا اب کٹھ پتلی کو بھگادیں گے۔  نوجوان ڈگریاں ہاتھوں میں لیے دھکے کھا رہے ہیں، عمران کہتا تھا جب پٹرول، بجلی مہنگا ہوتی ہے مطلب وزیراعظم چورہیں، یہ خود تاریخی چورنکلا، تین سالوں میں کرپشن کے ریکارڈ ٹوٹ چکے ہیں، اس نے عوام کی جیب، پیٹ پرڈاکہ مارا ہے، یہ چینی،آٹا،پانی،گیس،کھاد چورہے۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ میاں صاحب کو لندن بھیج دیا اور یہاں کٹھ پتلی کو بٹھا دیا گیا، احتجاج تو کریں گے لیکن عدم اعتماد بھی لے کر آئیں گے۔ چیئرمین پیپلزپارٹی نے خان بیلہ میں مارچ کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوام سے سوال ہے 3سال گزر چکے کیا تبدیلی نظر آئی؟ نالائق، نااہل وزیراعظم کو ہٹانے کیلئے نکلے ہیں۔  پی ٹی آئی آئی ایم ایف ڈیل کی وجہ سے ملک معاشی بحران سے گزر رہا ہے، ہم پی ٹی آئی آئی  ایم ایف ڈیل کیخلاف نکلے ہیں، بڑھتی مہنگائی اور بیروزگاری کیخلاف احتجاج کر رہے ہیں۔  قائد عوام کو شہید کر کے پیپلزپارٹی کو ختم کرنے کی سازش کی گئی، محترمہ کے شہید ہونے پر زرداری نے پاکستان کھپے کا نعرہ لگایا، آصف زرداری نے ملک میں جمہوریت کو بحال کیا، آصف زرداری نے سندھ اور بلوچستان کو حق دیا، 18ویں ترمیم کے ذریعے صوبوں کو اختیارات دیئے۔  لانگ مارچ شروع ہوتے ہی اپوزیشن جماعتیں پیپلزپارٹی کے پیج پر آچکیں، کٹھ پتلی سے عوام کا اعتماد اٹھ چکا، اب پارلیمان کا اعتماد اٹھنا چاہیے، 3سال میں جو کوئی نہیں کرسکا وہ پیپلزپارٹی کے عوامی مارچ نے کر دکھایا، کٹھ پتلی عوامی مارچ کی طاقت دیکھ کر گھبرا گیا، کٹھ پتلی نے گھبرا کر پٹرول اور بجلی کی قیمتوں میں کمی کر دی۔

Facebook Comments

متعلقہ مواد

Back to top button