101

شوکت ترین برباد معیشت کو ٹھیک کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے

لاہور( آوازچترال) سینئر صحافی حبیب اکرم نے کہا ہے کہ شوکت ترین برباد معیشت کو ٹھیک کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے، پیپلزپارٹی کے دور میں بھی شوکت ترین نے معیشت کو ٹھیک کیا تھا،ورنہ وزیراعظم کی پالیسی پناہ گاہ ، لنگرخانے اور احساس پروگرام تک محدود ہے،قوم کو کام کی عادت ڈالنے کی بجائے بھکاری بنایا جارہا ہے۔انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں کہا کہ شوکت ترین سے کچھ توقعات ہیں، کیونکہ ہماری معیشت کی جس طرح بربادی کی جارہی ہے اس کو شوکت ترین روکنے کا سبب بنے گا،جس طرح پی ٹی آئی معیشت کی بربادی کررہی ہے اسی طرح پیپلزپارٹی بربادی کررہی تھی۔ وزیراعظم کی پالیسی پناہ گاہوں ، لنگرخانوں اور احساس پروگرام کی پالیسی ہے،پاکستان اور پاکستانی قوم کو برباد کرنے کیلئے ان تین پروگراموں کا سب سے زیادہ کردار ہوگا۔ آج وزیراعظم نے سکھر میں اعلان کیا کہ ایک کرور 20لاکھ خاندانوں کو پیسے دیں گے، وزیراعظم صاحب آپ نے توایک کروڑ نوکریاں دینی تھیں، آپ ایک کروڑ لوگوں کو بھیک دے رہے ہیں۔ آپ نے کارخانے بنانے تھے لیکن آپ لنگر خانے بنا رہے ہیں؟آج پریس کلب کے سامنے بھی لنگرخانے کی گاڑیاں کھڑی ہوئی تھیں، ثانیہ نشتر جیسی اعلیٰ خاتون وزیراعظم کو بتا رہی تھی کہ بینکوں میں ڈیٹا جائے گا، یہ تو فقیر بنایا جارہا ہے، وزیراعظم عمران خان کا دعویٰ تھا میں نوجوانوں کو تربیت دوں گا، کارخانے لگاؤں گا، 8ہزار ارب ٹیکس اکٹھا کروں گا، نوکریاں دوں گا، آپ لوگوں کی غیرت ختم کررہے ہیں، لوگوں کو ہاتھ پھیلانے کی عادت ڈال رہی ہے، پاکستان میں عوام کو ہنر دینا چاہیے کام پر لگانا چاہیے۔ لوگوں کو کام کرنے کی عادت ڈالنا ہوگی، مسئلہ یہ ہے کہ ہمارے وزیراعظم نے کوئی تعمیراتی کام نہیں کیا، انہوں نے صرف وہ کام کیاجو ان کی اپنی سکلز تھیں، اس کے علاوہ ان کو کوئی کام نہیں آتا ، ہماری طرح کرکٹ کی تجزیہ نگاری کی لیکن وہ بھی تھوڑا عرصے کیلئے کی۔اس کے بعد مانگنا شروع کردیا، جس آدمی نے کام نہ کیا ہواس آدمی کیلئے مانگنا مسئلہ نہیں ہے، جس کام کوہم سمجھ رہے ہیں ناقابل قبول ہے وزیراعظم اس کو سمجھتے ہیں قابل قبول ہے۔

Facebook Comments