91

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کا غیر قانونی ہاؤسنگ سکیموں کیخلاف کریک ڈاؤن کا حکم

پشاور ( آوازچترال)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان غیر قانونی ہاؤسنگ سکیموں کا سخت نوٹس لیتے ہوئے ان کیخلاف فوری کریک ڈاؤن شروع کرنے کا حکم دیدیا ہے۔ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کی زیر صدارت پشاور ریجن کے تمام اضلاع میں ترقیاتی منصوبوں کا جائزہ لینے اورفوری نوعیت کے عوامی مسائل کو حل کرنے کیلئے اعلیٰ سطح کا ایک اجلاس جمعرات کے روز وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں منعقد ہواجس میں صحت، تعلیم، مواصلات، آبنوشی، بلدیات، آبپاشی، بجلی، گیس سمیت دیگر شعبوں میں ترقیاتی منصوبوں پر پیشرفت کے علاوہ ان اضلاع میں عوام کو درپیش فوری نوعیت کے مسائل کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔  صوبائی کابینہ ممبران تیمور سلیم جھگڑا، اشتیاق ارمڑ، شہرام ترکئی، کامران بنگش، میاں خلیق الرحمان، سلطان خان، عارف احمد زئی اور عبدالکریم کے علاوہ پشاور ریجن سے تعلق رکھنے والے اراکین صوبائی اسمبلی اور متعلقہ محکموں کے انتظامی سیکرٹریوں نے اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس کو سالانہ ترقیاتی پروگرام میں شامل ضلع پشاور،چارسدہ، مردان، صوابی، نوشہرہ، خیبر اور مہمند کے ترقیاتی منصوبوں کے بارے میں الگ الگ بریفنگ دی گئی۔اُنہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ آنے والے اجلاسوں میں گزشتہ اجلاس میں کئے گئے فیصلوں اور جاری کردہ ہدایات پر عمل درآمد کو یقینی بنا کر رپورٹ پیش کریں بصورت دیگر کسی کے ساتھ کوئی رعایت نہیں برتی جائے گی۔  وزیراعلیٰ نے کہاکہ حکومت کا اولین مقصد لوگوں کو سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے جس کیلئے سرکاری مشینری کو عوام کے خادم بن کر کام کرنا ہو گااور اس سلسلے میں ٹھو س نتائج دینا ہوں گے۔  اس موقع پر وزیراعلیٰ نے محکمہ ابتدائی و ثانوی تعلیم کو صوبائی دارلحکومت پشاور اور اس کے گرد ونواح میں خستہ حال سرکاری سکولوں کی عمارتوں میں زیر تعلیم بچوں کو فوری طور پر دیگر عمارتوں میں منتقل کرنے اور ان عمارتوں کی دوبارہ تعمیر کیلئے متعلقہ اراکین اسمبلی کے ساتھ ایک اجلاس منعقد کرکے اُن کی مشاورت سے قابل عمل پلان تیار کرنے جبکہ محکمہ اعلیٰ تعلیم کو صوبے میں ڈگری کالجوں کے قیام کے منصوبے کی فزیبلٹی سٹڈی جلد مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ جو کالجز فزیبل ہیں اُن پر جلد عملی کام کا آغاز کیا جائے۔

Facebook Comments