75

”چوہدری برادران نے عمران خان کا ساتھ چھوڑ دیا تھا، عثمان بزدار کے خلاف تحریک عدم اعتماد آنے والی تھی،

اسلام آباد( آواز چترال  نیوز) معروف تجزیہ کار افتخار احمد نے نجی ٹی وی چینل پر وزیراعظم عمران خان کی چوہدری شجاعت حسین سے ملاقات کا حوالے دیتے ہوئے کہا کہ چوہدری صاحبان کے گھر جانے میں ایک بات بڑی واضح تھی کہجو دوست عمران خان کے تھے انہوں نے کہا کہ دیکھو عمران اب یہ تمہاری کھیل ہے اب یہ تم نے کھیلنی ہے، تم نے ہی اس سے نمٹنا ہے ہم اس سے زیادہ تمہارے ساتھ کھڑے نہیں ہو سکتے، اگر ساتھ کھڑے ہوں گے تو ہم بہت برے فریق بن جائیں گے، معروف تجزیہ کار نے کہا کہ میں سمجھتا ہوں کہ وہ فریق بن چکے ہیں لیکن اس ملاقات کے واقعہ کو میں بڑے پیمانے پر دیکھتا ہوں کہ پانچ دسمبرکو وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے خلاف ووٹ آف نو کنفیڈینس موو ہونے لگا تھا اور سب تیاری مکمل تھی اور جس وقت چوہدری شجاعت کا فون افسوس کے لئے میاں نواز شریف کو گیا تو وہاں سے گھنٹیاں بج گئیں اور بھاگ دوڑ شروع ہوئی۔

Facebook Comments