64

معیشت کا بیڑا غرق ، پی آئی اے، اسٹیل ملز، ریلوے، واپڈا تباہی کے دہانے پر ، گردشی قرضہ چوبیس سو ارب تک پہنچ گیا ہے۔ مشتاق احمد خان

پشاور(آوازچترال نیوز) امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا ہے کہ وزیراعظم نے پاکستان کو ریاست مدینہ بنانے کا وعدہ کیا، عوام کو تبدیلی اور نئے پاکستان کے خواب دکھائے لیکن ڈھائی سال کے اندر اپنے ہر وعدے اور دعوے سے یوٹرن لیا۔ وزیراعظم نے عوام سے جھوٹ بولا ہے۔ پی ٹی آئی اور عمران خان نے مہنگائی، کرپشن، مافیا، بے روزگاری اور امریکہ کی غلامی کا پاکستان دیا ہے۔ حکومت نے معیشت کا بیڑا غرق کردیا ہے، پی آئی اے، اسٹیل ملز، ریلوے، واپڈا تباہی کے دہانے پر پہنچ چکے ہیں، گردشی قرضہ چوبیس سو ارب تک پہنچ گیا ہے۔ موجودہ اور سابقہ حکمرانوں نے عافیہ صدیقی اور ان کی والدہ کو دھوکا دیا ہے۔ عافیہ صدیقی کو واپس لانے کے وعدے سے بھی حکومت نے یوٹرن لے لیا۔ جماعت اسلامی عافیہ صدیقی کو واپس لائے گی۔ اسٹیبلیشمنٹ بتائے کہ قبائلی اضلاع میں ٹارگٹ کلنگ کا کیا مقصد ہے۔ عوام جان چکے ہیں کہ ٹارگٹ کلنگ میں کون ملوث ہے۔ نواز شریف کو موجودہ حکومت نے شوکت خانم ہسپتال کے ذریعے سرٹیفیکیٹ دلا کر لندن بھیجا ہے۔ وزیراعظم آج تک نہ نواز شریف اور نہ ہی زرداری کی لوٹی ہوئی دولت واپس لاسکے۔ فرانس کی طرف سے ریاستی سرپرستی میں توہین رسالت کے باوجود فرانس کے سفیر کی اسلام آباد میں موجودگی شرمناک ہے۔ حکمران حرمت قرآن اور ناموس رسالت پر پاکستانی عوام کے جذبات کی ترجمانی میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے۔ امریکہ اور یورپ کے ڈر کی وجہ سے حرمت قرآن اور ناموس رسالت پر حکمران پسپائی اختیار کرچکے ہیں۔ اسٹیبلشمنٹ انتخابات میں دھاندلی اور قیادت کے انتخاب کی بجائے اپنی آئینی ذمہ داری پر توجہ دیں۔ لوگوں کو غائب کرنا ظلم ہے۔ جماعت اسلامی اس ملک میں ایسا نظام لائے گی جس میں کوئی کرپشن، مہنگائی اور بے روزگاری نہیں ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گراسی گراؤنڈ مینگورہ سوات میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر جماعت اسلامی ضلع سوات کے امیر حمیدالحق، سابق امیدوار صوبائی اسمبلی محمد امین اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ جلسہ عام میں جماعت اسلامی کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل بختیار معانی اور صوبائی سیکرٹری جنرل عبدالواسع بھی موجود تھے۔ سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت میں ملک میں بے روزگاری عام ہو چکی ہے۔ ادویات، گندم، آٹے، چینی اور سمیت ضرورت کی تمام اشیاء کئی فیصد مہنگی ہوگئی ہیں۔حکومت میں مافیا بیٹھا ہوا ہے جنکی وجہ سے مہنگائی کا عذاب ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں روزانہ 11 بچوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات ہوتے ہیں۔ جب ہم حکومت کو ایسے مجرموں کو سر عام پھانسی پر لٹکانے کی بات کرتے ہیں تو وزیراعظم کہتے ہیں کہ سرعام پھانسیوں پر یورپی اقوان ناراض ہوتی ہیں۔ حکومت بچوں پر رحم کرے، بچوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات کی روک تھام کا واحد حل سرعام پھانسی ہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے توہین رسالت کے مسئلے پر سمجھوتا کرلیا ہے۔ ناموس رسالت کے قانون پر موجودہ حکومت غداری کی مرتکب ہورہی ہے۔ افسوس اور شرم کی بات ہے کہ حکومت نے اب تک نہ فرانس کے سفیر کو واپس بھیجا ہے نہ اپنا سفیر فرانس سے بلایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کورونا کا نام لے کر بلدیاتی انتخابات سے بھاگنے کی کوشش کررہی ہے۔ حیرت ہے گلگت بلتستان کے انتخابات میں کورونا کا خطرہ نہیں ہوتا، لیکن بلدیاتی انتخابات میں ہے۔ ہم حکومت کو بھاگنے نہیں دیں گے۔ بلدیاتی انتخابات عوام کا حق ہے، حکومت بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کا اعلان کرے۔

Facebook Comments