89

قول و فعل میں کھلا تضاد، تحریک انصاف نے اپنے ہی فیصلے کی خلاف ورزی کر ڈالی

گلگت ( آواز چترال) قول و فعل میں کھلا تضاد، تحریک انصاف نے اپنے ہی فیصلے کی خلاف ورزی کر ڈالی۔ تفصیلات کے مطابق حکومت کرونا وائرس پھیلاو کی وجہ سے اپوزیشن کے جلسے روکنے کیلئے کوشاں ہے، لیکن حکمراں جماعت نے اب خود دوبارہ جلسہ کر ڈالا ہے۔ جمعرات کے روز گلگت بلتستان کے ضلع نگر میں تحریک انصاف کی جانب سے شمولیتی جلسے کا انعقاد کیا گیا۔ جلسے میں وفاقی وزیر علی امین گنڈاپور، گورنر گلگت بلتستان راجہ جلال مقپون اور تحریک انصاف کے مرکزی رہنما سیف اللہ خان نیازی نے شرکت کی۔ یہ جلسہ ایک آزاد امیدوار کے اعزاز میں منعقد کیا گیا جس نے تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کیا۔ اس حوالے سے تحریک انصاف کو تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ عوام کا کہنا ہے کہ کچھ روز قبل وزیراعظم نے اعلان کیا تھا کہ اب حکومت خود کوئی جلسے نہیں کرے گی، لیکن چند روز بعد ہی تحریک انصاف نے گلگلت میں جلسہ کر ڈالا۔ واضح رہے کہ 3 روز قبل وفاقی حکومت نے ملک بھر میں جلسے جلوسوں پر پابندی عائد کردی،ؤ تھی۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ پچھلے چند دنوں میں کورونا کیسز میں4 گنا اضافہ ہوگیا، ایس اوپیز کے تحت کاروباری سرگرمیاں جاری رکھیں گے،کورونا پھیلنے کی رفتار کم کرنے کیلئے مارکیٹوں، مساجد اور کاروباری جگہوں پر ماسک کا استعمال یقینی بنایا جائے۔ خطرہ ہے کہ اگر ہم نے ایس اوپیز پر عمل نہ کیا تو ہسپتالوں میں پریشر بڑھ جائے گا، دنیا میں ہم نے دیکھا کہ دوسری لہر تیزی سے پھیلی ہے۔پوری قوم سے اپیل کرتا ہوں اب احتیاط کرنے کا وقت ہے، اگر ہم اب احتیاط کرلی تو ہم بچ جائیں گے۔سب سے آسان احتیاط ماسک ہے، عوامی اجتماعات میں ہم جہاں بھی جمع ہوں ماسک پہن لیں، اس سے کورونا پھیلنے کی رفتار کم ہوجائے گی۔ حکومت نے ملک بھر میں جلسوں پر پابندی عائد کردی ہے۔ گلگت بلتستان میں انتخابی مہم کے دوران کورونا وائرس تیزی سے پھیلا ہے۔ 300 سے زیادہ لوگ ایک جگہ جمع نہیں ہوں گے۔

Facebook Comments