203

4 سال بعد حویلیاں طیارہ حادثے کی رپورٹ تیار، حادثہ پی آئی اے انجیئنرنگ کی غفلت کے باعث پیش آیا

کراچی ( آواز چترال ) 4 سال قبل حویلیاں میں ہونے طیارہ حادثے کی تحقیقاتی رپورٹ تیار کر لی گئی ہے ۔ رپورٹ کے مطابق پائلٹ کو انتہائی پیچیدہ نوعیت کی تکنیکی خامی کا سامنا کرنا پڑا، حادثہ ٹربائن بلیڈ ٹوٹنے کی وجہ سے ہوا اور ٹربائن کا بریک ہونا پی آئی اے منٹیننس کی غفلت ہے۔ ایک انجن کا بلیڈ ٹوٹا ہوا تھا، دوسرے انجن نے کام کرنا چھوڑ دیا، ٹربائن ٹوٹنے سے پنکھوں کی رفتار کم ہوئی جس سے پائلٹ طیارے کو سنبھال نہ سکا ۔ فضائی ماہرین کا کہنا ہے کہ اس سے پہلے اس نوعیت کی خامی کبھی نہیں ہوئی، ایسی صورتحال میں پائلٹ کے لیے طیارہ کو کنٹرول کرنا ناممکن ہوجاتا ہے۔ واضح رہے کہ 7 دسمبر 2016 کو چترال سے اسلام آباد پرواز کرنے والا پی آئی اے کا اے ٹی آر طیارہ حویلیاں کے قریب گر کر تباہ ہوگیا تھا ، اس حادثے میں معروف نعت خواں جنید جمشید اور ان کی اہلیہ سمیت 47 افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

Facebook Comments