66

علم نہیں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں اچانک کیوں بڑھائی گئیں، علی محمد خان

اسلام آباد (آوازچترال نیوز ) تحریک انصاف کے مرکزی رہنما ء علی محمد خان نے کہا ہے کہ علم نہیں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں اچانک کیوں بڑھائی گئیں، تیل کی قیمتیں بڑھانے کا وقت درست نہیں، بجٹ سیشن چل رہا ہے اور ابھی بجٹ منظور بھی نہیں ہوا۔ انہوں نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں پراپنے ردعمل میں کہا کہ حکومت نے اچانک پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھا دی ہیں۔مجھے علم نہیں کہ کیوں اچانک قیمتیں بڑھائی گئی ہیں، ہوسکتا ہے کہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہوگیا ہے، اسی لیے حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھائی ہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ تیل کی قیمتیں بڑھانے کا وقت درست نہیں، بجٹ سیشن چل رہا ہے اور ابھی بجٹ منظور بھی نہیں ہوا۔ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانے کیلئے کابینہ اجلاس میں کوئی مشاورت نہیں کی گئی۔ بہتر ہوتا اگر کابینہ میں تیل قیمتیں بڑھانے پرمشاورت کرلی جاتی۔ اسی طرح معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل کا کہنا ہے کہ پٹرول کی قیمت عالمی منڈی کے مطابق طے ہوتی ہے، جب دنیا میں قیمت کم ہوئی وزیراعظم نے فوری ریلیف دینے کیلئے قیمتیں کم کرنے کا حکم دیا اور اب دنیا بھر میں اضافے کے اثرات سامنے آرہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمت اب بھی خطے میں سب سے کم ہے۔بھارت میں180، جاپان196، بنگلہ دیش174 اور چین میں138 روپے قیمت ہے۔ دوسری جانب مسلم لیگ ن کے رہنماؤں شاہد خاقان عباسی، خواجہ آصف اور احسن اقبال نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ وزیراعظم فوری مستعفی ہوجائیں، پی ٹی آئی نیا وزیر اعظم چُن لے، پٹرول کی قیمت71 روپے 15 پیسے کی جائے، پٹرول کی اصل قیمت67 روپے ہے، باقی ٹیکس شامل ہیں، حکومت معیشت کو سنبھالنے میں ناکام ہوچکی ہے۔

Facebook Comments