76

بجٹ پیش کیے جانے سے قبل حکمراں جماعت کے 21 اراکین اسمبلی نے اپنی حکومت کیخلاف بغاوت کر دی

لاہور (  آوازچترال نیوز) بجٹ پیش کیے جانے سے قبل حکمراں جماعت کے 21 اراکین اسمبلی نے اپنی حکومت کیخلاف بغاوت کر دی، سینئر صحافی چوہدری غلام حسین کا دعویٰ کا کہنا ہے کہ جہانگیر ترین کے حمایت یافتہ اراکین اسمبلی نے واضح کر دیا ہے کہ وہ کسی صورت حکومت کو بجٹ پیش کرنے نہیں دیں گے۔ تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی چوہدری غلام حسین کی جانب سے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے حکمراں جماعت تحریک انصاف کیلئے خطرے کی گھنٹی بجائی گئی ہے۔چوہدری غلام حسین کا کہنا ہے کہ اپوزیشن ایک طرف، لیکن خود تحریک انصاف کے اپنے اراکین اسمبلی اپنی حکومت کیخلاف باغی ہوگئے ہیں۔ تحریک انصاف کے کئی اراکین اسمبلی یہ فیصلہ کر چکے ہیں کہ وہ اپنی حکومت کو بجٹ پیش نہیں کرنے دیں گے۔ چوہدری غلام حسین کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف کے تقریباً 21 اراکین اسمبلی ایسے ہیں جو اپنی حکومت کیخلاف منصوبہ بندی کر رہے ہیں۔ یہ تمام اراکین اسمبلی جہانگیر ترین کے حمایت یافتہ ہیں۔ چوہدری غلام حسین کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت کو اگلے مالی سال کا بجٹ منظور کروانے میں خاصی مشکلات پیش آئیں گی۔ جبکہ دوسری جانب سے بجٹ پیش کیے جانے سے چند روز قبل ہی تحریک انصاف کی اتحادی جماعت بی این پی بھی ناراض ہوگئی ہے۔ بی این پی نے تحریک انصاف کی حکومت سے علیحدگی کی دھمکی دے دی ہے۔بی این پی کا موقف ہے کہ حکومت کی جانب سے اتحاد کے حوالے سے کیے گئے وعدوں پر تاحال عمل نہیں کیا گیا، اسی باعث اتحاد سے علیحدگی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ذرائع کے مطابق حکومت کی جانب سے اتحادی جماعت کے تحفظات دور کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ جبکہ اپوزیشن جماعتوں نے بھی واضح کر دیا ہے کہ قومی اسمبلی میں جاری بجٹ اجلاس کے دوران حکومت کو بھرپور انداز میں ٹف ٹائم دیا جائے گا۔

Facebook Comments