83

اختیارات کے غلط استعمال کی روک تھام کیلئے نیا قانون تیار

پشاور۔(  آوازچترال نیوز)وفاقی حکومت نے سول بیورو کریسی میں کرپشن، مالی بے ضابطگیوں اور اختیارات کے غلط استعمال کی روک تھام کے لئے نیا قانون تیارکرلیاہے نئے قانون کے تحت نئی سزائیں تجویز کی گئی ہے محکمانہ تحقیقات مکمل کرنے اور سزاء دینے کیلئے مدت کاتعین بھی کیا گیاہے وفاقی حکومت نے سول سروس کے لئے موجودہ ڈسپلنری رولز کو غیر موثر قراردیا ہے اور نئے قواعد تیار کئے گئے ہیں۔ نئے قانون میں محکمانہ تحقیقات کیلئے انکوائری افسر اور مجاز اتھارٹی کی حد ختم کرنے کی تجویز ہے نئے قانون میں کرپشن، بے ضابطگیوں اور اختیارات کے غلط استعمال کی تحقیقات کے لئے انکوائری افسر کو دو ماہ اورمجاز اتھارٹی کو سزا یافتہ ملزم سے رہائی تک کے لئے تیس دن کی مدت مقرر کرنے کی تجویز ہے ٗوفاقی حکومت نے سول سروس افسران کے لئے جو نئی سزائیں تجویز کی ہیں ان میں جرمانے، ملازمت کی مدت ضبط کرنا اور مالی بے ضابطگیوں کی صورت میں رقم کی وصولی شامل ہیں وفاقی حکومت مذکورہ قانون کابینہ سے منظوری کے بعد نافذ کریگی۔

Facebook Comments