84

نیویارک انتظامیہ نے نمازِجنازہ کیلئے کورونا کے جاں بحق افراد کی لاشیں کنٹینروں میں ڈال کر مساجد منتقل کرنا شروع کردیں

واشنگٹن( آوازچترال نیوز) نیویارک انتظامیہ نے نمازِجنازہ کیلئے کورونا کے جاں بحق افراد کی لاشیں کنٹینروں میں ڈال کر مساجد منتقل کرنا شروع کردی ہیں۔ نیویارک میں موجود پاکستانی نژاد امریکی شہری کی ویڈیو سامنے آئی ہے جس میں وہ ایک مسجد کے باہر موجود ہیں۔ پاکستانی شہری عدیل چیمہ کا ویڈیو میں کہنا تھا کہ حالات خراب ہیں اور روزبروز کورونا کیسز کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے۔عدیل چیمہ نے کہا کہ یہ وہ شہر ہے جس کے بارے میں مشہور ہے کہ یہ کبھی نہیں سوتا لیکن آج حالات یہ ہیں کہ لوگو ڈرے ہوئے گھروں سے باہر نہیں نکل رہے۔ انہوں نے بتایا کہ وہ خود سات روز بعد گھر سے ضروری کام سے باہر نکلے ہیں۔ انہوں نے مسجد کی ویڈیو شئیر کی جس میں مسجد کے باہر کھڑا کنٹینر دیکھا جاسکتا ہے۔ عدیل چیمہ نے بتایا کہ اموات کی تعداد اتنی بڑھ گئی ہے کہ میتیں اس طرح کے کنٹینروں میں ڈال کر مساجد کے باہر رکھ دی جاتی ہیں اور ہر نماز کے بعد نمازجنازہ پڑھ کر انہیں دفن کرنے بھیج دیا جاتا ہے۔ انہوں نے پوری دنیا کے لوگوں سے اپیل کی کہ سب گھر رہیں، سماجی فاصلے کے اصول پر عمل کریں اور اشد ضرور کے سوا گھر سے نہ نکلیں۔

۔ خیال رہے کہ امریکا میں کورونا وائرس سے ہلاکتیں 70 ہزار کے قریب پہنچ چکی ہیں جبکہ اس کے مریضوں کی تعداد 12لاکھ 12ہزار 900 ہو چکی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق کورونا وائرس سے امریکا میں اب تک 69 ہزار 921 افراد موت کے منہ میں پہنچ چکے ہیں ، جبکہ اسپتالوں میں 9 لاکھ 54 ہزار 911 کورونا مریض اب بھی زیرِ علاج ہیں۔زیرِ علاج مریضوں میں سے 16 ہزار 50 کی حالت تشویش ناک ہے جبکہ 1 لاکھ 88 ہزار 68 کورونا مریض اب تک شفایاب ہو چکے ہیں۔مزید 289 امریکی فوجیوں میں کورونا وائرس کا انکشاف ہوا ہے جس کے بعد کورونا سے متاثرہ امریکی فوجیوں کی تعداد 7ہزار 434 ہو گئی۔ریاست نیویارک میں 3لاکھ 27ہزار 374افراد کورونا وائرس میں مبتلا ہیں جبکہ یہاں 25 ہزار کورونا کے مریض ہلاک ہو چکے ہیں

Facebook Comments