150

غیر مقامی افراد کے خلاف اپر چترال میں کاروائی ہو گی۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر اپر چترال

بونی(ذاکرذاخمی سے)غیر مقامی وہ افراد جو بے غیر کسی پیشگی اجازت نامے اپر چترال میں پائے گئے تو ان کے خلاف قانونی کاروائی کی جائیگی۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر اپر چترال محمد عرفان الدین آج اپنے دفتر میں تجار یونین بونی اپر چترال کی نمائیندہ وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اللہ کی کرم سے لوئیر چترال اور اپر چترال اب تک کرونا وائیریس سے محفوظ ہے۔ ا س صورتِ حال کو برقرار رکھنے کے لیے انتظامیہ اور عوام کو ملکرکام کرنے کی اشد ضرورت ہے۔اس موقع پر تجار یونین کے صدر محمد شفیع اور جنرل سکرٹری نے اس بات پر شدیدتحفظات کا اظہار کیا۔ کہ کرونا زادہ ضلعوں سے مختلف گاڑی جو سبزی،پھل، مرغی وغیرہ لیکر اتے ہیں۔ وہ حالات کے پیش نظر حفاظتی اقدامات کی بالکل پرواہ کیے بے غیر اپر چترال کے کونے کونے تک پہنچتے ہیں اور ساتھ دیہات میں بھی غیر مقامی افراد کے گھومنے پھیرنے کی شکایات ملتے رہتے ہیں جو کہ موجودہ صورت حال میں خطرے سے خالی نہیں۔انتظامیہ کو چاہیے کہ وہ ان لوگوں پر کڑی نظر رکھ کر حکومت اور انتظامیہ کی واضع کردہ حفاظتی اصولوں پر مکمل عمل درامد کرائیے۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر اپر چترال محمد عرفان ادلدین نے کہا کہ انتظامیہ ہر ممکن کوشش کر رہی ہے کہ حکومتی واضع کردہ اصولوں پر سختی سے عمل درامدیقینی ہو۔ تاہم خلاف ورزی کرنے والوں کے ساتھ کوئی رعایت نہیں کی جائیگی۔ بازار اور عوام کے نوٹس میں جو اس طرح کے بات ائیے تو انتظامیہ کو اگاہ کرے کیونکہ ہمیں ملکر اس کرونا وائریس کے خلاف لڑنا ہے۔ آپ نے مزید کہا کہ انتظامیہ کی ہلیپ لائن 0943470025 ہر وقت حاضر ہے ایسے کوئی افراد بازار یا دیہات میں نظر ائیے تو ہیلپ لائن یا مقامی تھانہ کو اطلاع دی جائے۔ تاکہ ایسے قانون شکنوں کے خلاف فوری کاروائی ہو سکے۔ اے۔ ڈی۔ سی نے مزید کہا کہ اس وقت تھرمل گن سے اسکرینینگ کا عمل شروع ہو چکا ہے۔ ائیندہ کے لیے اپر چترال انے والے اسی طرح کے لوگوں کو اس عمل سے گزارا جا کر اگے جانے کی اجازت دی جائیگی۔

Facebook Comments