99

چترال ، انڈر21گیمز اختتام پذیر، تحصیل مستوج اورچترال کی ٹیمیں‌ سبقت لے گئیں

چترال (  نمائندہ آوازچترال ) ڈائریکٹریٹ آف سپورٹس خیبر پختونخوا کے زیر انتظام انڈر 21گیمز گورنمنٹ سنٹنیل ماڈل ہائی سکول چترال کے سٹیڈیم میں منعقد ہوئے ۔ اختتامی تقریب کے مہمان خصوصی کمانڈنٹ چترال سکاوٹس کرنل محمد علی ظفر اور صدر محفل ڈپٹی کمشنر چترال نوید احمد تھے ۔ ڈی پی اورچترال وسیم ریاض ، اسسٹنٹ کمشنر چترال عبدالولی خان ، ڈسٹرکٹ سپورٹس آفیسر چترال عبدالرحمت بھی موجود تھے ۔ یہ مقابلے انٹر تحصیل سطح پر منعقد ہوئے ۔ جس میں فٹبال ، والی بال ، بیڈ منٹن اتھلیٹکس ، رسہ کشی ، کبڈی شامل تھے اپر چترال کے تحصیل تورکہو موڑکہو کا مقابلہ مستوج کے ساتھ ہوا ۔ جس میں فٹبال اور دوڑ میں تورکہو موڑکہو نے کامیابی حاصل کی ۔ جبکہ والی بال ، بیڈ منٹن ، رسہ کشی اور کبڈی مقابلے میں کامیابی مستوج کے حصے میں آئے ۔ اسی طرح لوئر چترال میں تحصیل چترال کا مقابلہ تحصیل دروش سے ہوا ۔ جس میں دروش کو صرف کبڈی میں کامیابی ملی ۔ جبکہ فٹبال، والی بال ، بیڈ منٹن ، رسہ کشی اور دوڑ کے مقابلے تحصیل چترال نے جیت لئے ۔ کبڈی کو چترال میں بطور گیم پہلی مرتبہ متعارف کیا گیا ۔ کامیاب ٹیموں کو بیس بیس ہزار اور رنر اپ ٹیموں کو دس دس ہزار روپے انعام دیے گئے ۔ اسی طرح کھلاڑیوں کو یومیہ ٹی اے کے طور ایک ایک ہزار روپے دیے گئے ۔ کمانڈنٹ چترال سکاءوٹس کرنل محمد علی ظفر ، ڈپٹی کمشنر چترال نوید احمد اورڈی پی او وسیم ریاض نے کھلاڑیوں میں انعامات تقسیم کئے ۔ اس موقع پر کمانڈنٹ چترال سکاءوٹس نے خطاب کرتے ہوئے کہا ۔ کہ چترال کے جوانوں میں تعلیم کے ساتھ ساتھ کھیلوں کی بے پناہ صلاحیتیں موجود ہیں ۔ ان کو صرف مواقع اور رہنمائی کی ضرورت ہے ۔ انٹر تحصیل کھیلوں کے انعقاد سے ان کی صلاحیتوں کو نکھارنے کے مزید مواقع ملیں گے ۔ اور با صلاحیت کھلاڑیوں کے انتخاب میں مدد ملے گی ۔ مستقبل میں یہاں کے کھلاڑی چترال اور ملک کا نام روشن کرنے کے قابل ہوں گے ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ صحت مند تفریح اچھے کھلاڑی اور اچھے شہری بننے میں مدد گار ثابت ہوتے ہیں ۔ انہوں نے کامیاب ٹیموں کو مبارکباد دی اور رنر اپ ٹیموں کو اپنی کارکردگی بہتر بنانے کی ہدایت کی ۔ قبل ازین جمعرات کے دن اسسٹنٹ کمشنر چترال عبدالولی خان نے فیتہ کاٹ کر انڈر 21 انٹر تحصیل کھیلوں کا افتتاح کیا ۔ جس کے بعد مختلف تحصیلوں کے کھلاڑیوں نے وردی میں مارچ پاسٹ کیا ۔ اور قومی ترانہ پیش کیا ۔ کھیل کے دوران شہنائی اور ڈھول کے فنکاروں نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا ۔ جس سے کھیل کی رنگینیوں میں اضافہ ہوا ۔ ڈسٹرکٹ سپورٹس آفیسر عبدالرحمت نے میڈیا کو بتایا ۔ کہ کھیل میں حصہ لینے والے تمام کھلاڑیوں میں کٹ تقسیم کئے گئے ہیں ۔ جن میں جوگرز ، جراب اور شرٹ شامل ہیں ۔ انہوں نے کہا ۔ کہ کھلاڑیوں کو سہولت دینے کی ہر ممکن کو شش کی گئی ہے ۔ تاہم اپر چترال میں شدید سردی اور بعض مقامات پر برفباری کے سبب کھیلوں کا انعقاد ممکن نہ ہو سکا ۔ اس لئے اُن کو بھی لوئر چترال بلایا گیا ۔ جہاں انہوں نے آج مقابلوں میں حصہ لیا