72

سیاحتی زونز میں بین الاقوامی معیار کی سہولیات فراہم کی جائینگی، عاطف خان

پشاور-(آوازچترال رپورٹ) سینئر صوبائی وزیر سیاحت، کھیل، آثارقدیمہ، میوزیم و امور نوجوانان عاطف خان نے کہاہے کہ بین الاقوامی درجہ بندی کے اداروں نے سال 2020کیلئے پاکستان کو محفوظ اور بہترین سیاحتی مقام قرار دیا ہے، وزیراعظم پاکستان عمران خان کا بھی وژن ہے کہ ملک میں سیاحت کو فروغ دیا جائے،اس سلسلے میں صوبے میں چار نئے سیاحتی زونز بنائے جا رہے ہیں جہاں سیاحوں کو بین الاقوامی معیار کے مطابق سہولیات فراہم کی جائیں گی،اس کے علاوہ سیاحتی مقامات پر ایکوٹورازم ویلیجزبھی بنائے جا رہے ہیں، ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد کے نجی ایک ہوٹل میں خیبرپختونخوامربوط سیاحتی ذونز(خیبرپختونخوا انٹیگریٹڈ ٹورازم ڈیویلپمنٹ پراجیکٹ (کائٹ) پراجیکٹ کے زیراہتمام میڈیا آگاہی پروگرام کے موقع پر مختلف سٹیک ہولڈرز سے خطاب کرتے ہوئے کیا،اس موقع پر سیکرٹری محکمہ سیاحت، ثقافت، کھیل، آثارقدیمہ،میوزیم و امور نوجوانان کامران رحمان،پراجیکٹ ڈائریکٹر توصیف خالد، ڈائریکٹر گلیات ڈیویلپمنٹ اتھارٹی رضا حبیب، کائٹ پراجیکٹ عہدیداران، پبلک اینڈ پرائیویٹ فرمز سمیت دیگر اہم شخصیات موجود تھیں۔ سینئر وزیر عاطف خان نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ نئے سیاحتی زونز کیلئے جگہوں کا تعین کیا گیاہے جن میں مانکیال(ڈسٹرکٹ سوات)، ٹھنڈیانی (ڈسٹرکٹ ایبٹ آباد)، مداقلشت (ڈسٹرکٹ چترال) اور گنول (ڈسٹرکٹ مانسہر ہ) ہزارہ ڈویڑن شامل ہیں جبکہ صوبے کے تین مقامات کمراٹ (ڈسٹرکٹ دیر)، کالام (ڈسٹرکٹ سوات) اور چترال ڈسٹرکٹ میں سرمایہ کاری اور ایکو ٹورازم کے منصوبے پر بھی کام کیا جارہا ہے،سینئر وزیر نے مزید کہا کہ خیبرپختونخوا کی معیشت میں سیاحت کا ایک اہم حصہ ہے اور ہماری کوشش ہے کہ زونزبنانے کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ صوبے اور ملک کی معیشت اچھی ہو، لوگوں کو روزگار ملے اور صوبے کا ایکو سسٹم خراب نہ ہو سکے، خیبرپختونخوا کی سیاحت کے شعبوں کی اہمیت کو مدنظر رکھے ہوئے صوبے میں سیاحتی زونز بنانا مقصد ہے یہ پاکستان کا پہلا منصوبہ ہے جبکہ دنیا میں یہ منصوبے کامیابی سے بنائے گئے ہیں، خیبرپختونخوا میں سیاحت ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے جس کو ہم اب بنیاد بنا کر ایکو ٹورازم کو فروغ دینگے۔

Facebook Comments