63

حکومت نے بے نظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر جلسے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا

کراچی(آوازچترال رپورٹ)  وفاقی حکومت نے بے نظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر جلسے کی اجازت دینے سے انکار کردیا۔ اردوپوائنٹ کے ذرائع کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے بے نظیر بھٹو کی برسی کے موقع پرپاکستان پیپلز پارٹی کو جلسہ کرنے کی اجازت نہیں دی۔ترجمان بلاول بھٹو زرداری نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ حکومت اوچھے ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہے تاہم بے نظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر جلسہ لیاقت باغ راولپنڈی میں ہو گا اور ہر حال میں ہو گا۔مصظفیٰ نواز کھوکھر نے کہا کہ یہ فاشٹ حکومت ہمیں اپنے شہیدوں کی برسی تک منانے نہیں دے رہی اور سلیکٹڈ حکومت فاشزم نافذ کر کے بھی عوامی سیاست سے خوفزدہ ہے۔ اسی لیے ہر وہ آواز دبانے کی کوشش کی جا رہی ہے جو سلیکٹڈ کے خلاف اٹھتی ہے۔ترجمان بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ یہ کیسی جمہوریت ہے جہاں عوام کے حقوق کی بات نہ پارلیمنٹ میں کرنے دی جا رہی ہے اور نہ ہی باہر۔ ہم اپنے جہموری، آئینی اور قانونی حقوق سے ہر گز دستبردار نہہیں ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ نیا پاکستان انتہا پسند مودی کے بھارت سے مختلف نہیں ہے اسی لیے بھارت میں مودی کے خلاف اٹھنے والی عوامی نفرت سے عمران خان کچھ عبرت حاصل کریں۔ہم بے نظیر بھٹو کی برسی کا جلسہ لیاقت باغ میں کرنے کے لیے ہر قانونی راستہ اختیار کریں گے۔ دوسری جانب بلاول بھٹو بھی کئی بار کہہ چکے ہیں کہ حکومت اجازت دے یا نہ دےبے نظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر جلسہ لیاقت باغ راولپنڈی میں ہو گا اور ہر حال میں ہو گا۔ واضح رہے کہ بے نظیر بھٹو کی برسی کے موقع پرہر سال 27دسمبر کولیاقت باغ راولپنڈی میں جلسہ کیا جاتا ہے۔

Facebook Comments