82

وزیراعظم کو سعودیہ کے دباؤ کیوجہ سے ملائیشیا کا دورہ منسوخ کرنے پر سخت ردِعمل کا سامنا

اسلام آباد ( آوازچترال نیوز) وزیراعظم عمران خان سعودی عرب کے سامنے جھک گئے۔وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب کے دباؤ پر ملائیشیا کا اہم سرکاری دورہ منسوخ کر دیا ہے۔چونکہ سعودی عرب کو کوالالمپور سربراہ اجلاس میں شرکت کی دعوت نہیں دی گئی، سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کی قیادت کو یہ خدشہ ہے کہ کوا لالمپور سربراہ اجلاس کہیں او آئی سی کی جگہ نہ لے لے۔وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب کا دورہ بھی کیا محمد بن سلمان سے بات نہ بن پائی تو دباؤ میں آکر ملائیشیا کا دورہ منسوخ کر دیا۔لیکن وزیراعظم عمران خان کو اس فیصلے پر سوشل میڈیا پر سخت ردِعمل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ کیونکہ ملائیشیا اور ترکی نے مسئلہ کشمیر پر کھل کر پاکستان کا ساتھ دیا لیکن سعودی عرب اور یو اے ای سے ویسا ردِعمل سامنے نہ آیا۔ جب کہ اسی وقت مودی کو سوال ایوارڈ سے نواز کر مسلمانوں کے زخموں پر نمک چھڑک دیا گیا۔ مودی کو اعلی ترین اماراتی سول اعزاز دینے پر ملائیشیا نے متحدہ عرب امارات کیخلاف شدید ردعمل دیا تھا۔ ملائشین مشاورتی کونسل کی جانب سے اماراتی حکومت کے اقدام کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ یو اے ای کیلئے انتہائی شرمناک بات ہے کہ یہ حقیقت جانتے ہوئے بھی کہ بھارت میں اقلیتوں کو بدترین ظلم و تشدد کا نشانہ بنا یا جارہا ہے، بھارتی وزیراعظم کو اعلیٰ ترین سول ایوارڈ سے نواز ا گیا۔سینیر صحافی فخر درانی کا کہنا ہے کہ ملائشیا نے کشمیر ایشو پرنہ صرف پاکستان کا ساتھ دیابلکہ اپنےاس اصولی موقف کی وجہ سےاربوں ڈالر کاانڈیا سے تجارتی خسارہ برداشت کرنے پر تیارہوگیا۔جب کہ سعودی اور اماراتی حکمرانوں نے نریندر مودی کو نہ صرف سب سے بڑا سول ایوارڈ دیا بلکہ انڈیا کی کشمیر پالیسی کی بھی تائید کی۔پھر بھی خان عربوں کاتابعدار۔ سینئر صحافی احمد نورانی کا کہنا تھا کہ پہلےامریکی دبائوپرکشمیرپرخاموشی اختیارکرنی پڑی,اب سعودی عرب کادبائوکہ کوالالمپورکادورہ کینسل کیاجائے پی ٹی آئی کےرہنمادعوی کررہےہیں کہ عمران خان نےسٹینڈ لینےکافیصلہ کرلیاہے,وہ اس بارپاکستان کاسودانہیں کریں گےاورملائشیا ضرورجائیں گے, اگرایساہوتاہےتوعمران خان کی تعریف کی جانی چاہیے۔ ایک صارف نے ایک صارف نے کہا کہ وہ سعودی عرب جس نے کھلے عام کشمیر کے تنازعے میں بھارت کا ساتھ دیا۔ جس نے مودی کو اعلی ترین اعزاز سے نوازا۔ اس سعودی عرب کے کہنے پر نیازی نے ملائیشیا اور ترکی کے صدور سے ملنے سے انکار کر دیا۔ جو واحد ملک تھے جو اس تنازعہ میں ہمارے ساتھ کھڑے تھے۔

Facebook Comments