36

خیبر پختونخوا کی ساری آبادی کو صحت کارڈ دینے کا فیصلہ

  پشاور(آوازچترال رپورٹ)۔صوبائی وزیر اطلاعات شوکت علی یوسفزئی نے کہا ہے کہ آئندہ ماہ دسمبر میں صوبے کی سو فیصدآبادی کو صحت انصاف کارڈ جاری کر رہے ہیں ٗجس کے ذریعے7 لاکھ روپے تک کا علاج مفت فراہم کیا جائے گا ٗ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز ایک سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کے وژن کے مطابق تعلیم صوبائی حکومت کی پہلی ترجیح ہے ٗ۔ پاکستان تحریک انصاف کے مسلسل چھ بجٹ میں تعلیم سر فہرست ہے جبکہ صحت دوسرے نمبر پر ہے دنیا چاہتی ہے کہ پاکستان تعلیم کے شعبہ میں موجود خامیوں اور پولیو کو ختم کرے لیکن ہم خود آگاہی نہ ہونے کی وجہ سے رکاوٹ بنے ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ آبادی کے مقابلے میں تعلیمی اداروں کی تعداد کم ہے لیکن کوشش کر رہے ہیں کہ موجودہ انفراسٹرکچر میں تعلیمی مسائل حل کریں انہوں نے کہا کہ وسائل کا زیادہ حصہ انسانی وسائل اور تعلیم پر لگانے سے قومیں بنتی ہیں سابق حکومتوں نے بھی تعلیم کے لیے کام کیا ہو گا۔  لیکن ترجیح میں نہیں رکھا  موجودہ حکومت تعلیمی ایمرجنسی پر کام کر رہی ہے انہوں نے کہا کہ حکومت میرٹ پر مزید اساتذہ بھرتی کر رہی ہے تاکہ سرکاری سکولوں کا معیار بھی مزید بہتر ہو ماضی میں سرکاری سکولوں نے بڑے بڑے لوگ پیدا کیے ہیں تعلیمی معیار اور بچوں کو تعلیم دلانے میں والدین کو آگاہی دینے کی بہت ضرورت ہے تعلیم کی کمی کی وجہ سے لوگ ہمارے حقوق غصب کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت کا پہلا سال مشکل تھا جس میں سخت فیصلے کرنے پڑے پی پی پی اور پی ایم ایل ن کی حکومتوں نے پی آئی اے 375 ارب روپے، گیس 157 ارب روپے اور بجلی کو اربوں روپے خسارے میں چھوڑا ان اداروں کا خسارہ ختم کیے بغیر عوام کو ریلیف دینا نا ممکن تھا۔