95

امیر جماعت اسلامی پاکستان سینٹر سراج الحق نے صوبائی امیر مشتاق احمد خان کا استعفیٰ نامنظور کرتے ہوئے اس کو اپنی ذمہ داریاں جاری رکھنے کی ہدایت کردی ۔سراج الحق

پشاور (آوازچترال نیوز)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق کے زیر صدارت جماعت اسلامی خیبرپختونخوا کی صوبائی مجلس شوریٰ کا اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں ملکی اور بین الاقوامی صورت حال کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔جلاس میں ملک کی صورت حال، اپوزیشن کی جانب سے 27تاریخ کو دیئے جانے والے دھرنے کے حوالے سے بھی بات کی گئی۔اجلاس میں مرکزی جنرل سیکرٹری امیر العظیم، امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا مشتاق احمد خان، جنرل سیکرٹری عبدالواسع،سابق سینئروزیر عنایت اللہ خان، نائب امراء، امراء اضلاع اور ممبران شوریٰ نے شرکت کی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ کشمیر میں ایک بہت بڑا انسانی المیہ جنم لے چکاہے۔ 80لاکھ کشمیری اس وقت دنیا کی سب سے بڑی جیل میں بند ہیں۔ہسپتال بند ہیں، علاج کی سہولت نہ ملنے کی وجہ سے بیمار و زخمی گھروں میں دم توڑ رہے ہیں۔ حکمرانوں کی غفلت اور نااہلی کی وجہ سے کشمیر کا مسئلہ پس منظر میں چلا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تقریباً 80روز ہو گئے ہیں کہ کشمیر کے اندر کرفیونافذ ہے۔ اور بھارتی افواج کے مظالم میں آئے روز اضافہ ہو رہا ہے۔ یہ اس حکومت کی نااہلی ہے کہ اس کی ناکام خارجہ پالیسی کی وجہ سے کشمیر کا مسئلہ بین الاقوامی سطح پر اہمیت حاصل کرنے کے باوجود اس طرح سے اجاگر نہ ہو سکا جسطرح کرنے کی ضرورت تھی۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی کشمیر کے خون پر حکمرانوں کو سودا بازی نہیں کرنے دے گی اور اس حوالے سے اپنی مہم کو جاری رکھے گی۔ ملک کی صورت حال، اپوزیشن کی جانب سے 27تاریخ کو دیئے جانے والے دھرنے کے حوالے سے امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ احتجاج، جلسہ، جلوس ہر پاکستانی شہری اور سیاسی جماعت کا حق ہے اور حکومت اس سے کسی کو محروم نہیں کر سکتی۔ انہوں نے کہاکہ تبدیلی تبدیلی کا راگ الاپنے والوں کے دور حکومت میں ملک معاشی لحاظ سے سونامی کی رفتار سے نیچے گیا ہے۔ نااہل حکومت کی وجہ سے مسائل میں سونامی کی رفتار سے اضافہ ہواہے اور بیرونی قرضوں، افراط زر، تجارتی خسارہ، مہنگائی اور بے روزگاری سونامی کی رفتار سے اوپر گئے ہیں۔انہوں نے کہاکہ ملک ایسے لوگوں کے ہتھے چڑھ گیاہے جو اپنی ذات سے آگے دیکھنے کی صلاحیت نہیں رکھتے۔ انہوں نے کہاکہ عوام مہنگائی، بے روزگاری کے سونامی میں ڈوب گئے ہیں حکومت نے سودی نظام کو مزید مضبوط کیاہے۔ اجلاس میں امیر جماعت اسلامی خیبرپختونخوا سینیٹر مشتاق احمد خان نے ذاتی مصروفیات کے باعث جو استعفی امارت سے پیش کیا تھااس کو مسترد کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے انہیں اپنی ذمہ داری پر کام جاری رکھنے کی ہدایت کی۔

Facebook Comments