21

تقررو تبادلوں کی نئی پالیسی پر سختی سے عملدر آمدکا حکم

پشاور۔(آوازچترال رپورٹ)وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے اگلے چار سال کے دوران حکومتی کارکردگی میں مزید بہتر ی لانے کے لیے تقررو تبادلوں کے لیے نئی پالیسی کی تشکیل کے بعد اس پر سختی کے ساتھ عملدر آمدکرانے کی ہدایات جاری کردی ہیں جبکہ وہ خود تمام اہم امو ر کی مانیٹرنگ کریں گے ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ محمود خان کی ہدایت پر ابتدائی طورپر پبلک سروسز کی فراہمی کے ذمہ دار محکموں کے لیے تقرر وتبادلوں کی نئی پالیسی متعارف کرادی گئی ہے جس پر پشاور بھر کے پٹواریوں کے ایک رات میں تبادلے کی صورت میں عملدر آمد شروع کردیاگیاہے جس کے بعد تحصیلداروں،نائب تحصیلداروں،گرداوروں کے ساتھ ساتھ محکمہ تعلیم و محکمہ صحت کے تمام کلرکوں کے تبادلوں کاجھکڑ بھی چلنے والاہے۔

وزیر اعلیٰ کی ہدایات کے بعد محکمہ مال،صحت،تعلیم،سی اینڈ ڈبلیو،ایکسائز اور بلدیات کے ملازمین کے تقررو تبادلے ا ب نئی پالیسی کے تحت ہی ہونگے جس کامقصدعام لوگوں کی مشکلات کم کرنے کے ساتھ ساتھ مذکورہ محکموں کی کارکردگی میں مزید بہتری بھی لاناہے ذرائع کے مطابق وزیر اعلیٰ  نے واضح کیاہے کہ نئی پالیسی پر ہرصورت عملدر آمد کویقینی بنایاجائے گا اور گڈ گورننس پر کسی صورت سمجھوتہ نہیں کیاجائے گاوزیر اعلیٰ کایہ بھی کہناہے کہ اگلے چار سا ل میں سرکاری اہلکاروں کی کارکردگی مزید بہتر بنانے کے معاملہ میں غفلت برتنے والوں کو کسی بھی صورت معاف نہیں کیاجائے گا