8

حکومت کا ایک سال ، قرضے 75کھرب روپے تک پہنچ گئے

اسلام آباد( آوازچترال نیوز)پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کے پہلے سال میں قرضے 75کھرب روپے تک پہنچ گئے ہیں، وزیر مملکت برائے اقتصادی امور حماد اظہرکا کہنا تھا کہ نان ٹیکس ریونیو میں کمی کا سامنا ہے اور قرضوں میں اضافےکی وجہ ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں کمی ہے۔مقامی اخبار کے مطابق امریکی ڈالر کے مقابلے میں روپے کی گرتی ہوئی قیمت اور بڑھتے ہوئے بجٹ خسارے کے باعث وفاقی حکومت کا قرضہ حکومت کے پہلے سال میں 75کھرب روپے تک پہنچ چکا ہے۔اس کی بہت سے وجوہات ہیں تاہم اہم وجوہات میں شرح مبادلہ میں کمی کے ساتھ ٹیکس اور نان ٹیکس ریونیو میں بڑی کمی ہےلیکن وزیر مملکت برائے اقتصادی امور حماد اظہر اس بات سے متفق نہیں ہیں کہ اقتصادی بدحالی کی ذمہ دار پی ٹی آئی حکومت ہے۔حماد اظہر کا کہنا تھا کہ غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر پی ٹی آئی دور حکومت کے پہلے سال کے دوران اسی سطح پر برقرار رکھے گئے۔انہوں نے یاددہانی کرائی کہ ن لیگ کے دور حکومت میں اس میں تیزی سے کمی واقع ہوئی تھی ، جب کرنٹ اکاﺅنٹ خسارہ ماہانہ 2ارب ڈالرز ہوگئے تھے تاہم اس بات کا اقرار کیا کہ نان ٹیکس ریونیو میں کمی کا سامنا ہے ، ساتھ ہی ان کا کہنا تھا کہ رواں مالی سال کے دوران یہ ریونیو قومی خزانے میں آیا۔