جماعت اسلامی نے صوبائی حکومت کی طرف سے الیکشن کمیشن کو قبائلی اضلاع میں الیکشن کے التواء کے لئے لکھے گئے خط کو مسترد کردیا۔ سینیٹرمشتاق احمد خان | Awaz-e-Chitral

Breaking News

Home / تازہ ترین / جماعت اسلامی نے صوبائی حکومت کی طرف سے الیکشن کمیشن کو قبائلی اضلاع میں الیکشن کے التواء کے لئے لکھے گئے خط کو مسترد کردیا۔ سینیٹرمشتاق احمد خان

جماعت اسلامی نے صوبائی حکومت کی طرف سے الیکشن کمیشن کو قبائلی اضلاع میں الیکشن کے التواء کے لئے لکھے گئے خط کو مسترد کردیا۔ سینیٹرمشتاق احمد خان

پشاور (آوازچترال رپورٹ) امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا سینیٹرمشتاق احمد خان نے صوبائی حکومت کی طرف سے الیکشن کمیشن کو قبائلی اضلاع میں الیکشن کے التواء کے لئے لکھے گئے خط کو مسترد کردیا۔المرکز الاسلامی پشاور سے جاری کئے گئے اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ موجودہ کٹھ پتلی حکومت کی ناکام پالیسیوں اور نااہل طرز حکمرانی کا چہرہ عوام کے سامنے آشکارہ ہوچکا ہے۔ جس کی وجہ سے انھیں یہ بات صاف نظر آرہی ہے کے قبائلی اضلاع میں اگر بروقت صوبائی اسمبلی کے انتخابات ہوئے تو عوام انھیں مسترد کردینگے۔ اس لئے حکومت ایسی سازشوں میں مصروف ہے کہ کسی طرح بہانہ بنا کر انتخابات ملتوی کیے جائیں۔ اس مقصد کے لئے اب وہ امن و آمان اور سیکورٹی کو جواز بنانے کی کوششیں کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا اس وقت قبائلی اضلاع میں امن و آمان کی صورت حال ماضی کی نسبت کافی بہتر ہے۔ 2013ء کے قومی انتخابات کے موقع پر حالات اس سے بہت زیادہ خراب اور ابتر تھے اکثریتی علاقے فوجی آپریشن کی زد میں تھے۔ آبادی کی بڑی تعداد علاقے سے نقل مکانی کر چکی تھی۔ ان حالات میں بھی الیکشن کا انعقاد کیا گیا تھا۔انہوں نے کہا کہ قبائلی عوام کو ان کے آئینی اور جمہوری حقوق دلانے کے لئے ایک طویل اور تاریخ ساز جدوجہد کی گئی ہے۔ جس میں جماعت اسلامی کا کردار سب سے زیادہ اور اہم ہے۔ اس لئے ہم کسی بھی صورت کسی کو قبائلی عوام کے حقوق پر کوئی سمجھوتہ اور سودا بازی نہیں کرنے دینگے۔انہوں نے کہا کہ قبائلی عوام نے روز اول سے پاکستان کی سالمیت اور تحفظ کے لئے لازوال قربانیاں دی ہیں۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں سب سے زیادہ متاثر قبائلی عوام ہوئے ہیں۔ ان نقصانات کی تلافی اور ازالہ تب ہی ممکن ہے جب آگے بڑھ کر انہیں گلے سے لگایا جائے۔ اسی مقصد کے لئے فاٹا اصلاحات آئینی پیکج کا اعلان کیا گیا تھا۔ قبائلی اضلاع کو خیبر پختونخوا میں ضم کیا گیا تا کے قبائلی عوام کے احساس محرومی کو ختم کیا جاسکے۔ اس لئے ضروری ہے کے انضمام کے ثمرات کو عوام تک پہنچانے کے لئے صوبائی اسمبلی کے انتخابات فوراً منعقد کیے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت موجودہ حکومت اپنی ناکامی اور نا اہلی کو چھپانے کے لیے قبائلی عوام کو قربانی کا بکرا بنانا چاہتی ہے اور صوبائی اسمبلی کے انتخابات کو ملتوی کر کے اسے اپنی گھناؤنی سیاست کے بھینٹ چڑھانا چاہتی ہے جو قبائلی عوام سے غداری کے مترادف ہے جس سے مزید ان میں محرومی کا احساس پیدا ہوگا اور ان کے مسائل میں اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت نے انتخابات کے التواء کی کوئی سازش کی تو جماعت اسلامی اس کے خلاف بھرپور احتجاج کریگی۔

error: Content is protected !!