فواد چوہدری پی پی کے ساتھ رابطے میں ہیں، ان کے ذمے پی ٹی آئی کے اندر واردات ڈالنا ہے ، عید کے بعد ۔۔۔‘ سمیع ابراہیم نے خوفناک دعویٰ کردیا | Awaz-e-Chitral

Breaking News

Home / تازہ ترین / فواد چوہدری پی پی کے ساتھ رابطے میں ہیں، ان کے ذمے پی ٹی آئی کے اندر واردات ڈالنا ہے ، عید کے بعد ۔۔۔‘ سمیع ابراہیم نے خوفناک دعویٰ کردیا

فواد چوہدری پی پی کے ساتھ رابطے میں ہیں، ان کے ذمے پی ٹی آئی کے اندر واردات ڈالنا ہے ، عید کے بعد ۔۔۔‘ سمیع ابراہیم نے خوفناک دعویٰ کردیا

نیو یارک ( آوازچترال نیوز) سینئر اینکر پرسن سمیع ابراہیم نے دعویٰ کیا ہے کہ عمران خان کو ہٹانے اور افواج پاکستان کو کمزور کرنے کیلئے سازش ہورہی ہے جس کا فائنل چیپٹر عید کے بعد کھلے گا، فواد چوہدری تحریک انصاف کے لوگوں کو لیڈ کریں گے ، وہ پی پی کے ساتھ رابطے میں ہیں، ان کے ذمے تحریک انصاف کے اندر واردات ڈالنا ہے۔

 یوٹیوب پر جاری کی گئی اپنی ایک ویڈیو میں اینکر پرسن سمیع ابراہیم نے دعویٰ کیا کہ پاکستان کے خلاف سازش ہورہی ہے ، اس سازش میں انڈیا ، امریکہ، سیاستدان اور تحریک انصاف کے کچھ لوگ بھی شامل ہیں۔ عید کے بعد اس ساز ش کا فائنل چیپٹر کھلے گا جس کا مقصد ہوگا کہ عمران خان کو وزارت عظمیٰ سے ہٹایا جائے اور پاکستان کی فوج کو کمزور کیا جائے، اس سے یہ ہوگا کہ پاکستان کے لوگوں کا افواج پاکستان سے یقین متزلزل ہوجائے گا۔اس کیلئے ججز کے ریفرنسز کو بنیاد بنا کر اسی طرز کی تحریک چلائی جائے گی جس طرح مشرف کے خلاف وکلا تحریک چلی تھی۔
 انہوں نے کہا کہ امریکہ کے اندر موجود طاقتیں پوری طرح ایکٹو ہوگئی ہیں اور پاک فوج کو نشانے پر رکھ لیا ہے، عید کے بعد ججز کے ساتھ یوم یکجہتی منایا جائے گا اور اس تحریک کا اختتام عمران خان کو ہٹانے کے ساتھ ہوگا۔ تحریک انصاف کے اندر موجود گروپ کو فواد چوہدری لیڈ کریں گے اس وقت ان کا پیپلز پارٹی کے ساتھ رابطہ ہے پہلے بھی وہ پنجاب کے وزیر اعلیٰ بننا چاہتے تھے اور انہوں نے لابی بنانے کی کوشش بھی کی۔ وہ اپنے آپ کو ایسے لیڈر کے طور پر پیش کر رہے ہیں جو کہہ رہا ہے کہ سویلین اداروں کو لیڈ کرنا چاہیے اور پی ٹی ایم کے معاملے کو مذاکرات سے حل کرنا چاہیے۔

سمیع ابراہیم نے دعویٰ کیا کہ جب ججز کے ساتھ یوم یکجہتی منایا جائے گا تو پی ٹی ایم بھی آئے گی ، فواد چوہدری کے ذمے یہ کام ہے کہ وہ تحریک انصاف کے اندر واردات ڈالیں، اس وقت لوگوں کو یہ کہا جارہا ہوگا کہ عمران خان سے معاملات سنبھالے نہیں جارہے اس لیے انہیں ہٹادیا جائے۔

error: Content is protected !!