65

پولیو وائرس کے خاتمے کیلئے گائیڈ لائن جاری

شاور(آوازچترال رپورٹ)۔پشاور سمیت خیبر پختونخوا ٗ قبائلی اضلاع اور اور ملک بھر سے پولیو وائرس کے 100فیصد خاتمے کیلئے ٹھوس اور قابل عمل پالیسی کے ساتھ روڈ میپ کا تعین کر کے گائیڈ لائنز جاری کر دی گئی ہیں ٗ پہلی مرتبہ بیماری کی جڑ اور تہہ تک پہنچنے کی پالیسی کو متعارف کرایا جا رہا ہے ٗ پولیو مہمات کے دوران اہداف کے 100فیصد حصول کیلئے جعلی مارکنگ کے تدارک کی غرض سے ایک رنگ کے مارکر کی بجائے 7مختلف رنگوں کے مارکر استعمال کرنے کا تجویز دی گئی ہے۔ اسلام آباد اور راولپنڈی کے بعد پشاور میں بھی 10 سال تک کے بچوں کو پولیو ویکسین پلانے کا منصوبہ زیر غور ہے ٗ پشاور میں 60سے 70فیصد تک پولیو وائرس پایا جاتا ہے ٗ پولیو وائرس کی تجزیاتی رپورٹس میں 10سال تک کے بچوں کے فضلے میں بھی وائرس کی نشاندہی کی گئی ہے ۔ وزیراعظم کے معاون برائے انسداد پولیو بابر بن عطا نے ’’آج ‘‘ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ 25سال کی مسلسل محنت اور جدوجہد کے بعد بھی پاکستان میں پولیو وائرس کی موجودگی قابل تشویش امر ہے ۔ اب وقت آ گیا ہے کہ اس بیماری کی جڑ اور تہہ تک پہنچ کر اسے بنیاد سے ختم کیا جائے ٗ پولیو مہمات کے اہداف تک نہ پہنچنے میں پولیو ٹیموں اور دیگر ذمہ داروں کی غفلت بھی شامل ہے ٗ جعلی مارکنگ کے باعث ہزاروں بچے پولیو ویکسین سے محروم رہ جاتے ہیں اس لئے کسی ایک رنگ کے مارکر کی بجائے 7مختلف رنگوں کے مارکر استعمال کرنے کی تجاویز زیر غور ہیں ہر مہم میں الگ رنگ کا مارکر استعمال ہوگا جس کا صرف ضلعی انتظامیہ کو علم ہوگا اور مہم شروع ہونے تک مارکر کے کلر سے ٹیموں کو بے خبر رکھا جائیگا ہم اپنا مانیٹرنگ سسٹم نہ صرف فعال کر رہے ہیں بلکہ اس نظام کو حقیقی معنوں میں کارآمد بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پہلی مرتبہ ہم نے مختلف شہروں میں وائرس کی موجودگی کی رپورٹ کو پبلک کیا ہے تاکہ لوگوں میں آگاہی پیدا ہو ٗ ہم میڈیا کو اپنی لیبارٹریوں تک رسائی دینگے تاکہ عوام میں پولیو بارے غلط تاثر کو زائل کیا جاسکے انہوں نے کہا کہ پولیو وائرس کے مختلف ٹیسٹوں میں وائرس پھیلانے والے بچوں کی عمروں کا بھی تعین کیا جاتا ہے ٹیسٹ رپورٹس کی روشنی میں 10سال تک کے بچے بھی پولیو وائرس پھیلانے کا باعث بن رہے ہیں ۔ اس رپورٹ پر ہم نے اسلام آباد کی ضلعی انتظامیہ کے مطالبے پر وفاقی دارالحکومت کی 5یونین کونسلوں میں 10 سال تک کے بچوں کو پولیو ویکسین پلائی جبکہ رواں پولیو مہم کے دوران راولپنڈی کی 16یونین کونسلوں میں 10سال تک کے بچوں کو پولیو ویکسین کی فراہمی یقینی بنائی جا رہی ہے انہوں نے کہا کہ پشاور میں بھی 10سال تک کی عمر کے بچوں کو پولیو ویکسین پلانے کی تجاویز سامنے آئے ہیں ضلع انتظامیہ کی مشاورت سے پشاور میں بھی مذکورہ تجویز پر عمل درآمد کرانے کا ارادہ ہے بابر بن عطا نے مزید کہا کہ اب ٹھوس اور سخت پالیسی اپنانے کا وقت ہے لہٰذا جو کارکردگی نہیں دکھائے گا وہ پولیو ٹیموں کا حصہ نہیں رہے گا

Facebook Comments