73

تحریک انصاف کا تنظیمی ڈھانچہ تبدیل

پشاور۔(آوازچترال رپورٹ)تحریک انصاف کے نئے پارٹی آئین میں پارٹی تنظیم کا ڈھانچہ ہی تبدیل کر دیا گیا، نئے پارٹی آئین میں ریجن کے بجائے ڈویژنل سسٹم متعارف کروایا گیا ہے، جبکہ خیبرپختونخوا اور پنجا ب میں صوبائی صدر کے عہدے بھی متعارف کرائے جارہے ہیں اب خیبرپختونخوامیں ڈویژنل، ضلعی ، تحصیل اور یونین کونسل تک کے صدورمنتخب ہوں گے۔
تنظیم سازی یو سی تک کی بجائے اس سے نیچے حلقہ، وارڈ اور پولنگ سٹیشن تک کی جائے گی۔ذرائع کے مطابق تحریک انصاف کے نئے پارٹی آئین جس کی گزشتہ ماہ ہی چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے منظوری دی ہے میں پارٹی کا تنظیمی ڈھانچہ ہی تبدیل کر دیا گیا ہے۔ پرانے پارٹی آئین میں ہر صوبے کی تنظیم ریجن سے لے کر یو سی تک تھی، اب تنظیم سازی صوبائی صدر کے بعد ڈویژن پھر ضلع، اس کے بعد تحصیل، یو سی بلکہ یوسی تک کی بجائے اس سے تین درجے نیچے تک جائے گی جو حلقہ، وارڈ اور پولنگ سٹیشن تک ہو گی۔
پاکستان میں کل 26 ڈویڑنوں کے الگ الگ صدور ہوں گے جن میں پنجاب کے 8، سندھ کے 5، بلوچستان کے 6 اور خیبرپختونخوا کے 7 ڈویژنل صدور ہوں گے، تاہم ریجن کو تنظیم سازی میں عارضی طور رکھا جائے گا، جب ڈویژن مستحکم ہو جائیں گے تو ریجن ختم کر دئیے جائیں گے۔پارٹی ذرائع کے مطابق نئی تبدیلیوں سے پارٹی مزید مستحکم ہو گی۔

Facebook Comments