87

مستحق افراد کیلئے مزید 8لاکھ صحت کارڈز

پشاور۔ (آوازچترال نیوز)خیبر پختونخوا کے وزیرِ صحت ڈاکٹر ھشام انعام اللہ خان نے کہا ہے کہ ابھی تک تقریباً 15لاکھ افراد کو صحت انصاف کارڈ فراہم کئے گئے ہیں جو کہ نہایت شفاف طریقے سے مستحق افراد کو دیئے گئے ہیں جبکہ آئندہ سال مارچ تک مزید 8لاکھ مستحقین کو صحت سہولت کارڈ فراہم کئے جائیں گے
جس کے تحت غریب اور مستحق افراد کو صحت کی سہولیات مفت فراہم کی جارہی ہیں۔اْنہوں نے مزید کہا کہ مذکورہ پروگرام کے تحت حکومت نے انشورنس کمپنی کو ابھی تک 4,555 ملین روپے کی ادائیگی کی ہے۔ اس پورے عمل کا مقصد غریب عوام کو صحت کی بہترین سہولیات مفت اور اچھے اداروں میں فراہم کرنا ہے۔
اْنھوں نے اِن خیالات کا اظہار خیبر پختونخوا کی صوبائی اسمبلی میں بعض اراکین اسمبلی کی طرف سے محکمہ صحت کے بارے میں کئے گئے سوالات کے جوابات دیتے ہوئے کیا۔ وزیر صحت نے اراکین اسمبلی کو یقین دلایا کہ اْن کے دروازے محکمہ صحت سے متعلق کسی بھی مسئلے پر عمل درآمد سے متعلق شکایات اور تجاویز دینے کیلئے ہر وقت کھْلے ہیں اور کسی بھی صحت کی سہولت کے ادارے کی شکایات سے متعلق موقع پر مشترکہ معائنے کیلئے بھی دستیاب ہوں گے۔
محکمہ صحت میں تعینات بعض اہلکاروں کے بارے میں شکایات کا جواب دیتے ہوئے وزیر صحت خیبر پختونخوا نے تنبیہہ کی کہ کوئی بھی سرکاری ملازم قوانین سے با لاتر نہیں اور اگر کسی بھی ملازم کو اپنے فرائض کی انجام دہی میں غفلت برتتے ہوئے پایا گیاتو اْس کے خلاف سخت سے سخت تادیبی کاروائی عمل میں لائی جائی گئی۔ڈاکٹر حشام انعام اللہ خان نے اسمبلی کو بتایا کہ مختلف علاقوں میں محکمہ صحت کے ہسپتالوں اور ڈسپنسریوں اور دوسرے اداروں میں ضروری عملے کو پورا کرنے کیلئے جامع کاروائی کی جا رہی ہے اور بہت جلد ہر علاقے کو ڈاکٹروں اور دوسرے عملے کی تعیناتی مکمل کی جائیگی۔ اس عمل کیلئے محکمہ صحت میں HRسیل قائم کیا گیا ہے ۔

Facebook Comments