58

خیبرپختونخوا میں 30 بے نامی اکاؤنٹس، 10 ارب روپے کی ٹرانزیکشن کا انکشاف

پشاور: 

ایف آئی اے نے خیبرپختونخوا میں 30 بے نامی اکاؤنٹس کا سراغ لگالیا ہے۔

بے نامی اکاؤنٹس اور منی لانڈرنگ کیس میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے اور وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے 30 بے نامی اکاؤنٹس کا سراغ لگالیا ہے جن کے منی لانڈرنگ میں استعمال ہونے کے ثبوت بھی مل گئے ہیں۔ ایف آئی اے حکام کے مطابق 8 گھریلو ملازمین کے نام پر یہ بے نامی اکاؤنٹس کھلوائے گئے ہیں اور ان اکاؤنٹس سے تقریباً 10 یہ بے نامی اکاؤنٹس بونیر، سوات ، کالام اور بشام کے بینکوں میں سامنے آئے ہیں جب کہ رقوم کی ٹرانزیکشنز ایک سے زائد اضلاع میں کی گئی ہیں۔ ایف آئی اے نے مزید معلومات حاصل کرنے اور تحقیقات کے لئے ملوث افراد کے شناختی کارڈ اسٹیٹ بینک کو ارسال کردیے ہیں۔

Facebook Comments