52

اے اے سی چترال کا چھاپہ ، ناقص صفائی ، غیر معیاری اورگران فروشی پر متعدد دکانداروں کے خلاف کاروائی

 چترال ( محکم الدین )ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر ریونیو چترال طارق حسین نے بدھ کے روز چترال بازار پر چھاپہ مار کر نرخنامہ آویزان نہ کرنے ، اضافی قیمت وصول کرنے ، ناقص صفائی ، غلط ناپ تول اور غیر معیاری اشیاء خوردونوش بیچنے کی پاداش میں پندرہ افراد کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے اُنہیں نقد دو دو ہزار جرمانہ کیا ۔ جرمانہ کئے جانے والوں میں قصاب ، مُرغی فروش ، نانبائی ، کولڈ ڈرنکس والے جنرل سٹور مالکان اور دودھ فروش شامل ہیں ۔ اسسٹنٹ کمشنر نے اس موقع پر دکانداروں سے کہا ۔ کہ عوام کو لوٹنے کی کسی کو اجازت نہیں دی جائے گی ۔ اور نہ غلط ناپ تول اور ناقص صفائی کو برداشت کیا جائے گا ۔ ایسے لوگ قوم کے مجرم ہیں ۔ ان سے کوئی رو رعایت نہیں برتی جائے گی ۔ اسسٹنٹ کمشنر نے مُرغی فروشوں کی دکانوں میں گندگی پر شدید برہمی کا اظہار کیا ۔ اور کہا ۔ کہ جو بھی صفائی میں کوتاہی برتے گا ۔ اُسے سزا سے کوئی نہیں بچا سکتا ۔ اُن کے خلاف سنگین کاروائی ہوگی ۔ انہوں نے ڈھیری فارم کے نام سے بیچے جانے والے دودھ پر بھی تحفظات کا اظہار کیا ۔ کہ اس کی بھی لیبارٹری ٹسٹ ضروری ہے ۔ تاکہ یہ معلوم ہو سکے کہ واقعی یہ دودھ حفظان صحت کے اصولوں کے مطابق ہے ۔ طارق حسین نے غیر معیاری اشیاء کو ناقابل برداشت قرار دیا ۔ اور کہا کہ کسی کو بھی انسانی جانوں سے کھیلنے کی اجازت نہیں دی جائے گی ۔ اور اس حوالے سے مزید سخت اقدامات اُٹھائے جائیں گے ۔ درین اثنا موقع پر موجود عوامی حلقوں نے اسسٹنٹ کمشنر چترال کے اقدامات کی تعریف کی ہے ۔ اور مزید کاروائی کروائی کرنے اور اسے جاری رکھنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

Facebook Comments