66

چترال میں ریسکیو1122کے دفتر کی افتتاحی تقریب ۔وزیر اعلٰی پرویز خٹک نے چترال اور بونی میں ریسکیو 1122کے قیام کا اعلان کیا تھا آج اپنا وعدہ پورا کر دیا ہے ۔ بی بی فوزیہ

چترال(نمائندہ خصوصی) ممبر صوبائی اسمبلی اور پارلیمانی سکریٹری برائے سیاحت بی بی فوزیہ نے کہا ہے کہ قدرتی آفات وحادثات کے مواقع پر متاثرین تک بر وقت پہنچنا اور اُنہیں سہولیات فراہم کرنے میں ریسکیو 1122 کا کردار قابل تعریف ہے ۔ Image may contain: Bibi Fouzia, closeupان خیالات کا اظہار اُنہوں نے چترال میں ریسکیو1122کے دفتر کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اُنہوں نے کہا کہ سکول،کالج کی سطح پر طلبہ اور طالبات میں قدرتی آفات مثلاًسیلاب،زلزلہ آتشزدگی اور مختلف قسم کے حادثات کے موقع پر حالات سے نمٹنے کے لئے تربیت دینے کی ضرورت ہےImage may contain: one or more people, people standing, crowd and outdoor۔تاکہ اُنہیں آگہی مل سکے اور ایسے مواقع پر جانی نقصان کم سے کم ہوں۔ُنہوں نے کہا کہ ریسکیو 1122کے جوان اپنی زندگیوں کی پرواہ کئے بغیر لوگوں کو سہولیات دے رہیں ہیں ۔اُنہوں نے کہا کہ 2015میں جب چترال کا طول و عرص قدرتی آفات کا شکار تھا اُس وقت وزیر اعلٰی KPKپرویز خٹک اور PTIقائد عمران خان نے چترال کا دورہ کرکے بونی کے مقام پر میرے مطالبے پر چترال اور بونی میں ریسکیو 1122کے قیام کا اعلان کیا تھا آج اپنا وعدہ پورا کر دیا ہے Image may contain: 1 person, standing, mountain and outdoorجس پر چترال کے عوام اُن کا شکریہ ادا کرتے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ اس محکمے میں جن چترالی بے روزگار نوجوانوں نے ٹیسٹ انٹرویو دئیے ہیں بہت جلد میرٹ کی بنیاد پر اُن کی بھرتیوں کا عمل شروع ہوگا۔ اسے قبل ریسکیو1122کے ڈائیریکٹر اپریشن محمد آیاز Image may contain: 9 people, including Bibi Fouzia, people smiling, people standingخان نے اپنی خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ صوبے میں ریسکیو1122کا قیام 2010 ؁کو عمل میں لایا گیا تھا۔ قدرتی آفات،حادثات اور بم دھماکوں میں سب سے پہلے پہنچ جانا اور متاثریں کو سہولیات فراہم کرنا ریسکیو1122کا کارنامہ ہے۔بین الاقوامی سطح پر ہماری خدمات اورکارکردگی کو تسلیم کیا گیا ہے ۔Image may contain: 8 people, people sitting ہم نے سکولوں اور کالجوں میں لاکھوں افراد کو قدرتی آفات سے نمٹنے کے لئے تربیت دی ہے۔اب تک ایک لاکھ پچاس ہزار افراد کو مفت سہولیات پہنچا چکے ہیں۔ریسکیو1122کے اہلکار دن ہو یا رات ہر دم تیار رہتے ہیں اور اپنی جانوں کی پرواہ کئے بغیر سات منٹوں کے اندر اندر متاثرہ لوگوں تک پہنچ جاتے ہیں۔اس موقع پر تحصیل ناظم چترال مولانا محمد الیاس اور تحصیل ناظم مستوج مولانا محمد یوسف نے بھی خطاب کیا اُنہوں نے اپنی طرف سے ہر قسم کے تعاون کا یقین دلایا اور کہا کہ ریسکیو1122میں اب تک مقامی چترالی بے روزگار نوجوانوں کو بھرتی نہ کرنا نہایت آفسوس کا مقام ہے۔اسے قبل Image may contain: 3 people, people standing and outdoorمہمان خصوصی بی بی فوزیہ نے فیتہ کاٹ کر دفتر کا با قاعدہ افتتاح کیا۔

Facebook Comments