70

لوکل اور اربن ڈیویلپمنٹ میں پشاور سمیت مختلف اضلاع کی ترقی و خوشحالی کیلئے سالانہ ترقیاتی پروگرام 2018-19 کیلئے تقریباً 8 ارب 14 کروڑ روپے کی تجویز پیش کی گئی ہے ۔ عنا یت اللہ خا ن

پشاور ( آوازچترال رپورٹ ) سینئر وزیر بلد یا ت و دیہی تر قی خیبرپختونخوا وپارلیمانی لیڈر جماعت اسلامی عنا یت اللہ خا ن نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت عوام کو درپیش بنیادی مسائل کے حل کیلئے ایک ترقیاتی ایجنڈے پر گامزن ہے ۔ انہوں نے کہا کہ لوکل اور اربن ڈیویلپمنٹ میں پشاور سمیت مختلف اضلاع کی ترقی و خوشحالی کیلئے سالانہ ترقیاتی پروگرام 2018-19 کیلئے تقریباً 8 ارب 14 کروڑ روپے کی تجویز پیش کی گئی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر پشاور میں اے ڈی پی 2018-19 کے ایک جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر صوبائی وزیر زکوٰۃ حاجی حبیب الرحمان ، سیکرٹری بلدیات سید جما ل الدین شاہ ، طاہرہ یاسمین اور دیگر متعلقہ افسران نے شرکت کی ۔ طاہرہ یاسمین نے شرکاء اجلاس کو سالانہ ترقیاتی پروگرام 2018-19 کے لئے لوکل اینڈ اربن ڈیویلپمنٹ سیکٹرز میں نئی اور پرانی سکیموں کے بارے میں تفصیل بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ پشاور کے علاوہ مختلف اضلاع میں روڈز بحالی ، واٹر سپلائی پائیپس کی تنصیب ، صفائی ، پینے کی صاف پانی کی فراہمی ، نکاسی آب ، پبلک پارکنگ ، فلڈ ڈیمیجز پراجیکٹس ، جدید پارکنگ پلازہ ، میلہ مویشیاں اور فروٹ اینڈ ویجیٹیبل مارکیٹس کی تعمیر وغیرہ کیلئے سکیمیں شامل ہیں ۔ اجلاس میں دیگر اضلاع کے ساتھ بونیر، اپر دیر اور ہری پور اضلاع میں نئی ترقیاتی سکیموں کی نشاندہی کی گئی جبکہ اپر دیرمیں ٹریفک کے نظام میں بہتری لانے کیلئے اپر دیر بائی پاس کے منصوبے کیلئے سپیشل پیکج کی منظوری دی گئی ۔ سینئر وزیر بلدیات نے 2018-19 کی مجوزہ اے ڈی پی کے تحت وادی کمراٹ ، براول ، لرجم ، عشیری درہ ، تالاش ، میدان اور جندول میں نئی اور جاری ترقیاتی سکیموں پر کام کی رفتار کو مزید تیز کرنے کی ہدایت کی تا کہ عوام اجراء کی گئی سکیموں سے بروقت مستفد ہو سکیں۔

Facebook Comments