99

ڈی جی آئی ایس پی آر معیشت پر تبصروں سے گریز کریں، غیر ذمہ دارانہ بیانات پاکستان کی ساکھ متاثر کرسکتے ہیں :وزیرداخلہ

ڈی جی آئی ایس پی آر معیشت پر تبصروں سے گریز کریں، غیر ذمہ دارانہ بیانات پاکستان کی ساکھ متاثر کرسکتے ہیں :وزیرداخلہ

اسلام آباد (نمائندہ خصوصی ) وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ ڈی جی آئی ایس پی آر کو معیشت پر بیانات اور تبصروں سے گریز کرنا چاہئے۔ پاکستان کی معیشت مستحکم ہے۔ غیرذمہ دارانہ بیانات پاکستان کی عالمی ساکھ متاثر کر سکتے ہیں۔ 2013ءکے مقابلے میں معیشت بہتر ہے۔ توانائی منصوبوں و بجلی فراہمی سے صنعتی شعبے میں سرمایہ کاری سے درآمدات پر دباﺅ پڑا ہے۔ درآمدات پر دباﺅ قابل برداشت ہے‘ ٹیکسوں کی وصولی میں دوگنا سے زائد اضافہ ہوا ہے‘ ملک کی تاریخ کے سب سے بڑے ترقیاتی بجٹ پر عمل ہو رہا ہے۔ سکیورٹی آپریشنز کیلئے بھی وسائل فراہم کئے جا رہے ہیں۔ آئی ایم ایف پروگرام میں جانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔ وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ پاکستان امریکہ تعلقات خطے میں مشترکہ مقاصد کے حصول کے لئے بہت اہم ہیں۔ امریکہ میں مڈل ایسٹ انسٹیٹیوٹ کے تجزیہ کاروں سے خطاب کے دوران وفاقی وزیر داخلہ کا کہنا تھا افغانستان میں اغوا ہونے والے خاندان کی بازیابی پاکستان امریکہ تعلقات میں اہم موڑ ہے جبکہ تعلقات خطے میں مشترکہ مقاصد کے حصول کے لئے بہت اہم ہیں۔ انہوں نے کہا نیشنل ایکشن پلان پر عمل درآمد سے سکیورٹی صورتحال میں بہتری آئی اور پاکستان میں دہشت گردی کے واقعات میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے جبکہ سی پیک پاکستان سمیت، جنوبی اور وسطی ایشیا کی معیشت میں اہم کردار ادا کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ کی انٹیلی جنس شیئرنگ کی بنیاد پر 2012ءمیں افغانستان سے اغوا ہونے والی امریکی شہری کیٹلن کولمن اور ان کے خاندان کی بازیابی کیلئے پاکستان کی سکیورٹی فورسز کی کامیاب کارروائی سے دونوں ممالک کے قریبی تعلقات کی عکاسی ہوتی ہے۔ وفاقی وزیر نے کہا پاکستان کی دہشت گردی کے خاتمہ کی پالیسی بیس نکاتی نیشنل ایکشن پلان پر مشتمل ہے اور خطے میں دہشت گردی کے خاتمہ کے حوالے سے اس طرح کی کوششوں کی کوئی مثال نہیں ملتی۔ حکومت نے گزشتہ چار سال کے دوران بنیادی ڈھانچے کی ترقی اور اقتصادی اصلاحات کے پروگرام سے ملکی معیشت کو نمایاں ترقی دی ہے۔ انہوں نے چین پاکستان اقتصادی راہداری کو انقلابی منصوبہ قرار دیا اور کہا اس سے جنوبی اور وسطی ایشیا کے خطے کی ترقی، استحکام اور خوشحالی میں نمایاں اضافہ ہوگا۔وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری نے کہا ہے کہ محمد نواز شریف کی نااہلی کے فیصلے نے پاکستان کی معیشت کو نقصان پہنچایا، یہ فیصلہ کہاں سے ہوا کس نے کرایا، یہ اہم بات ہے، اس کو غور سے دیکھنا چاہئے اس کے پیچھے کیا مضمرات ہیں۔انہوں نے کہا کہ آج معیشت کے بارے میں پریشان ہونے والوں کو جاننا چاہئے اور پہلے یہ بحث ہونی چاہیئے کہ سابق صدر پرویز مشرف اور اس کے وزیر اعظم شوکت عزیز نے پاکستان میں معیشت اور توانائی کا مسئلہ پیدا کیا، قومی مجرم کو سزا دی جائے اور یہ دیکھا جائے کہ محمد نواز شریف کو ہٹا کر نقصان کس کا ہوا ہے۔

Facebook Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں