91

2دن پہلے استعفیٰ دینے والے رضوان اختر کے بھائی کابڑا کرپشن سیکنڈل منظر عام پر، سینئر صحافی کا اپنے پروگرام میں بڑا دعویٰ

‎اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پی آئی اے کے جہاز کے حوالے سے گزشتہ کئی دنوں سے پارلیمنٹ اور میڈیا میں بہت سی باتیں زیر بحث ہیں ۔اس حوالے سے سینئر صحافی نے اپنے پروگرام میں بڑا انکشاف کرڈالا۔نجی ٹی وی چینل  92 نیوز کے پووگرام میں سینئر اینکر پرسن روف کلاسرا کا کہنا تھا کہ پی آئی اے کے جہاز کو فروخت کرنے اوراس تمام ڈیل کے پیچھے جس شخص کا نام ہے وہ ہیں ایئر کموڈور عمران اختر جو کہ گزشتہ ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹینٹ جنرل رضوان اختر کے بھائی ہیں جنہوں نے حال ہی میں فوجسے ریٹائرمنٹ لی ہے۔رئوف کلاسرا نے پروگرام کے دوران کہا کہ عمران اختر پاک فضائیہ سے ڈیپوٹیشن کے ذریعے پی آئی اے میں گئے تھے تاہم عمران اختر نے27اکتوبر 2016 میں ایک کاغذ تیار کیا جس میں عمران اختر نے کہا کہ ہمیں 60 لاکھ روپے کے عوض یہ جہاز بیچ دینا چائیے اور اس ڈیل کی منظوری اس وقت کے نگراں ایم ڈی مسٹر برنٹ نے 2 دن کے بعد دیدی تھی۔ایک مہینے بعد ہی ڈیل کی سیل ڈیٹ تیار کرلی گئی اور جہاز دیدیا گیا۔ روف کلاسرا نے پروگرام کے دوران مزید کیا انکشافات کئے آپ بھی سنئے

Facebook Comments

اپنا تبصرہ بھیجیں